نابالغ لڑکی سے پسند کی شادی کرنیوالے نوجوان کی درخواست ضمانت مسترد

نابالغ لڑکی سے پسند کی شادی کرنیوالے نوجوان کی درخواست ضمانت مسترد

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ نے نابالغ لڑکی سے لو میرج کرنے والے نوجوان کی درخواست ضمانت مسترد کردی جس کے بعد پولیس نے رضاسرور نامی اس نوجوان کو گرفتارکرلیاجبکہ مہوش نامی نابالغ لڑکی کودارالامان بھجوا دیا،جسٹس سید مظاہرعلی اکبرنقوی نے ملزم رضا سرورکی درخواست ضمانت پرسماعت کی۔ملزم کے وکیل نے موقف اختیارکیا کہ اس کے موکل نے مہوش سے پسند کی شادی کی ہے، لڑ کی والدہ ممتاز بی بی نے تھانہ ملکہ ہانس ضلع پاکپتن میں اس کے خلاف اغواء کا مقدمہ درج کروادیا ہے۔درخواست گزارنے عدالت سے استدعا کی کہ کہ اس کی قبل ازگرفتاری درخواست ضمانت منظورکی جائے۔عدالت میں لڑکی کی والدہ کے وکیل نے پیش ہوکرموقف اختیارکیا کہ ملزم نے لڑکی کوشادی کاجھانسہ دے کراغواء کیا۔ برتھ سرٹیفکیٹ اورسکول سرٹیفکیٹ کے مطابق لڑکی کی عمر11 سال ہے،ملزم نے نکاح نامہ میں لڑکی کی عمر18 سال لکھوائی ہے۔ نابالغ لڑکی سے قانونی طورپرشادی نہیں کی جاسکتی۔ عدالت میں لڑکی نے بتایا کہ اس کی عمر13سال ہے اوراس نے رضا سرورسے پسند کی شادی کی ہے۔ عدالت نے فریقین کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد ملزم کی قبل ازگرفتاری ضمانت خارج کردی جبکہ لڑکی کودارالامان بھجوانے کا حکم دے دیا ہے۔

نابالغ لڑکی

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...