ملزم سلیم اللہ کے وکیل سے ٹرائل کورٹ کے جج کے ریمارکس بارے حلف نامہ طلب

ملزم سلیم اللہ کے وکیل سے ٹرائل کورٹ کے جج کے ریمارکس بارے حلف نامہ طلب

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے سانحہ آرمی پبلک سکول کے لاہور سے گرفتار ہونے ولاے سہولت کار کے مقدمہ کا ٹرائل کسی دوسری عدالت میں منتقل کرنے کی درخواست پر ملزم سلیم اللہ کے وکیل سے ٹرائل کورٹ کے جج کے ریمارکس کے بارے میں حلف نامہ طلب کر لیا ہے، چیف جسٹس مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے ملزم سلیم اللہ کی ٹرائل منتقلی کی درخواست پر سماعت کی، ملزم کے وکیل نے موقف اختیار کیا ہے کہ ملزم سلیم اللہ کا ٹرائل انسداد دہشت گردی کی عدالت میں زیر سماعت ہے، ٹرائل جج نے اوپن عدالت میں ملزم کو دہشت گرد کہا ہے، ٹرائل سے قبل کسی ملزم کو مجرم نہیں ٹھہرایا جا سکتا، ٹرائل جج کے ریمارکس نے ان کا ذہن ظاہر کر دیا ہے ،ملزم کا ٹرائل کسی دوسرے جج کے پاس منتقل کرنے کا حکم دیا جائے، عدالت نے مزید سماعت 10دن تک ملتوی کرتے ہوئے ملزم کے وکیل کو ہدایت کی کہ ٹرائل کورٹ کے جج کے ریمارکس کے بارے میں حلف نامہ جمع کرایا جائے۔

حلف نامہ

مزید : صفحہ آخر