نہ بجلی نہ پانی، بدترین لوڈشیڈنگ، عوام کی زندگی اجیرن، کئی شہروں میں احتجاج، ڈیسکوز دفاتر پر دھاوا

نہ بجلی نہ پانی، بدترین لوڈشیڈنگ، عوام کی زندگی اجیرن، کئی شہروں میں احتجاج، ...

لاہور (کامرس رپورٹر) حکومت کی نااہلی کے باعث ملک میں جاری بدترین لوڈ شیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن کر دی ۔ لوگوں کیلئے رات کو دو گھنٹے کی نیند بھی خواب بن گئی ۔ لوگ رات چھتوں اور گلیوں میں گزارنے پر مجبور ہو گئے ۔ بار بار ہونے والی لوڈ شیڈنگ کے باعث بیشتر علاقوں میں پانی بھی نایاب رہا ۔ نہ بجلی اور نہ پانی کے باعث لوگوں کے معمولات زندگی شدید متاثر ہو کر رہ گئے ۔ گزشتہ روز بھی صوبائی دارالحکومت سمیت کئی شہروں میں لوگوں کی جانب سے لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاج کیا گیا جبکہ کئی شہروں میں ڈیسکوزکے دفاتر پر دھاوا بول دیا گیا ۔ملک میں جاری شدید گرمی کے باعث بجلی کی ڈیمانڈ میں مزید اضافہ ہو گیا اور ڈیمانڈ بڑھ کر 19 ہزارمیگا واٹ تک پہنچ گئی جبکہ پیداوار 10400 میگاواٹ رہی جس کے باعث 8600 میگاواٹ کا شارٹ فال رہا ۔ بجلی کی پپداوار اور شارٹ فال میں فرق دو ہزار سے بھی کم رہ جانے کے باعث نیشنل پاور کنٹرول سنٹر بھی لوڈ مینجمنٹ میں ناکام ہو گیا تاہم مسلسل کئی کئی گھنٹے گرڈز کے لئے بجلی کی بندش کرکے کسی بڑے بریک ڈاؤن سے بچایا جا رہا ہے ۔گزشتہ روز بھی کم وولٹیج کے تحت لوڈ مینجمنٹ کا سلسلہ جاری رکھا گیا جس کے باعث لوگوں کی لاکھوں روپے مالیت کی قیمتی اشیا جل کر خاکستر ہو گئیں ۔ درجنوں ٹرانسفارمرز بھی جل گئے ۔ گزشتہ روز شہروں میں بارہ سے پندرہ گھنٹے جبکہ دیہی علاقوں میں اٹھارہ سے بیس گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...