اندھیرے جلد چھٹ جائیں گے ، دھرنوں سے توانائی منصوبوں میں تاخیر ہوئی : شہباز شریف

اندھیرے جلد چھٹ جائیں گے ، دھرنوں سے توانائی منصوبوں میں تاخیر ہوئی : شہباز ...

لاہور(خصوصی رپورٹ) وزیراعظم محمد نوازشریف اور وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف نے شیخوپورہ میں پنجاب حکومت کے اپنے وسائل سے گیس کی بنیاد پر لگنے والے بھکی پاور پلانٹ کا فتتاح کر دیا ہے۔اس منصوبے سے ابتدائی طو رپر 717میگا واٹ بجلی نیشنل گرڈ میں شامل ہوئی ہے اور اس منصوبے میں 53ارب روپے کی بچت کی گئی ہے۔18ماہ کے قلیل عرصے میں مکمل ہونے والے اس منصوبے سے آئندہ 30سالو ں میں 320ارب روپے کی بچت ہوگی۔وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف نے بھکی گیس پاور پلانٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ وزیراعظم محمدنوازشریف کی قیادت میں توانائی بحران کے خاتمے کے لئے کی گئی دن رات کی محنت رنگ لا رہی ہے ۔انشاء اللہ توانائی منصوبوں کی تکمیل سے ملک سے اندھیرے دور ہوں گے۔ منصوبوں کے مکمل ہونے سے 2017ء کے آخر تک یا 2018ء کے اوائل میں اجتماعی کاوشوں کی بدولت ملک سے بجلی کا بحران ختم ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ ایک طرف دھرنا گروپ ہے جس کے دھرنوں سے ملک کی معیشت کو بے پناہ نقصان ہوا۔پی ٹی آئی کی بد ترین سازش کے باعث توانائی منصوبوں میں تاخیر ہوئی۔2014ء میں دوست ملک چین کے صدر نے پاکستان کا دورہ کرنا تھالیکن دھرنوں کے باعث یہ دورہ ملتوی ہوا اور اندھیروں میں ہچکولے کھاتی قوم کے 10ماہ ضائع ہوئے۔کچھ زعماء نے چین کے صدر کے دورے کے حوالے سے پی ٹی آئی کی قیادت سے رابطہ بھی کیا لیکن یہ دھرنے والے اپنا دھرنا ختم کرنے پر تیار نہ ہوئے اورتوانائی منصوبوں میں تاخیر کا باعث بن کر قوم کے زخموں پر نمک پاشی کی ۔اگردھرنے کے باعث قوم کا قیمتی وقت ضائع نہ ہوتا تو یہ معاہدے ایک سال پہلے طے پا جاتے اور اب تک کئی منصوبے مکمل ہوچکے ہوتے او رپاکستان کہیں آگے جا چکا ہوتا۔انہوں نے کہاکہ 2014ء کے دھرنوں نے پاکستان کی معیشت کو تباہ کرنے میں کوئی کسر نہ چھوڑی بلکہ ان دھرنوں نے ملک کا دھڑن تختہ کیا ۔بھکی پاور پلانٹ سے1180میگا وا ٹ، حویلی بہادر شاہ پاو رپلانٹ سے 1200میگا واٹ او ربلوکی پاور پلانٹ سے 1200میگا واٹ بجلی حاصل ہوگی جو آپ کی متحرک قیادت کا ثمر ہے۔انہوں نے کہاکہ بلاشبہ یہ تینوں منصوبے لینڈ مارک ہیں کیونکہ 2008ء میں لگنے والا گدو پاور پلانٹ جو اس منصوبے کا چربہ ہے اس لئے کہ یہ گدو پاور پلانٹ بھی انہی کمپنیوں نے لگایا تھا جنہوں نے بھکی پاور پلانٹ کا منصوبہ لگایاہے۔2008ء میں لگنے والے گدوپاور پلانٹ 8لاکھ 36ہزار ڈالر فی میگاواٹ کی قیمت پر لگایاگیاجبکہ 3600میگا واٹ کے موجودہ گیس کی بنیاد پر لگنے والے بجلی کے منصوبے 4لاکھ 66ہزار ڈالر فی میگا واٹ کی قیمت پر لگ رہے ہیں جو گدو پاور پلانٹ کے مقابلے میں آدھی قیمت ہے۔انہوں نے کہاکہ ان منصوبوں میں 112ارب روپے کی بچت کی گئی ہے جو ہر گز مبالغہ آرائی نہیں ہے او راس بچت کو کسی بھی فورم پر چیک کیا جا سکتا ہے۔انہوں نے کہاکہ توانائی کے منصوبے لگ رہے ہیں ۔ان کے باعث بجلی کی لوڈ شیڈنگ میں کمی آنی چاہیے تھی بد قسمتی سے لوڈشیڈنگ میں اضافہ ہواہے تو اس کی وجہ دریاؤں میں پانی کی کمی بھی ہے جو ایک قدرتی امر ہے تاہم دوسری جانب ٹرانسمیشن، لائن لاسز او رلوڈ مینجمنٹ کے حوالے سے بھی ذمہ دار وں کو کٹہرے میں لایا جائے جن کی غفلت کے باعث لوڈشیڈنگ میں اضافہ دیکھنے میں آیاہے۔ وزیراعلی نے کہاکہ میں توانائی منصوبوں میں تعاون پر وفاقی وزراء اسحاق ڈار، خواجہ محمد آصف، شاہد خاقان عباسی ، پرنسپل سیکرٹری برائے وزیراعظم فواد حسن فواد، بینکرز، چیئرمین تھرمل پاور کمپنی عار ف سعید، سی ای او کمپنی احد چیمہ او رپوری ٹیم کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔میں پاکستان میں امریکی سفیر اور امریکی قونصل جنرل کے تعاون پر بھی مشکور ہوں ۔ قبل ازیں قائداعظم تھرمل پاو رکمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر احدچیمہ نے منصوبے کے بارے میں اہم خدوخال پر روشنی ڈالی ۔ صدر جنرل الیکٹرک پاور کمپنی محمد علی او رکمپنی کے دیگر حکام نے بھی تقریب سے خطاب کیا۔گورنر پنجاب رفیق رجوانہ ، وفاقی وزراء خواجہ محمد آصف ، شاہد خاقان عباسی ، صوبائی وزراء ، اراکین قومی و صوبائی اسمبلی ، پاکستان میں چین کے سفیر ، منصوبے پر کام کرنے والی کمپنیوں کے اعلی حکام ، ٹی وی اینکرز ، صحافیوں او رمختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

شہباز شریف

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...