ڈاکٹر عاصم کی دھمکیوں کے خلاف رینجرز کی عدالت میں درخواست

ڈاکٹر عاصم کی دھمکیوں کے خلاف رینجرز کی عدالت میں درخواست

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سابق وزیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم حسین اور دیگر کے خلاف گواہوں کو دھمکیاں دینے پر رینجرز کے وکیل نے انسداد دہشت گردی کی عدالت میں درخواست دائر کردی۔ گواہوں میں تین رینجرز اہلکار بھی شامل ہیں۔تفصیلات کے مطابق رینجرز کی جانب سے ان کے وکیل نے انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سابق وزیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم اور دیگر پر گواہوں کو دھمکیاں دینے کی درخواست جمع کروائی۔درخواست میں کہا گیا کہ ڈاکٹر عاصم اور ان کے ساتھی گواہوں کو دھمکیاں دے رہے ہیں۔رینجرز کے وکیل نے درخواست میں کہا کہ ڈاکٹر یوسف ستار سمیت 2 گواہوں کی زندگی کو خطرہ لاحق ہے۔ مقدمے میں 3 رینجرز اہلکار بھی گواہوں میں شامل ہیں۔درخواست کے مطابق سندھ ہائیکورٹ نے ملزموں کو ضمانت پر رہا کیا تھا۔ 11 نومبر 2016 کو ہائیکورٹ نے 2 ماہ میں ٹرائل مکمل کرنے کا حکم دیا تھا۔وکیل کی جانب سے درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت عالیہ سندھ کے حکم کے مطابق مقدمے کا ٹرائل جلد مکمل کیا جائے۔ اہلکاروں کا تبادلہ ہوتا رہتا ہے، بیانات جلد قلمبند کیے جائیں۔یاد رہے کہ دہشت گردوں کے علاج سے متعلق کیس میں ڈاکٹر عاصم، میئر کراچی وسیم اختر، رف صدیقی، قادر پٹیل، سلیم شہزاد و دیگر نامزد ہیں۔ڈاکٹر عاصم حسین پر اربوں روہے کی کرپشن کا مقدمہ بھی دائر ہے تاہم اس مقدمے میں 29 مارچ کو ان کی ضمانت منظور کر کے انہیں رہا کردیا گیا تھا۔بعد ازاں 15 اپریل کو انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ڈاکٹر عاصم حسین کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کا حکم نامہ بھی جاری کردیا تھا جس کے تحت وہ 2 ہفتے کے لیے علاج کی غرض سے بیرون ملک سفر کر سکتے ہیں۔

مزید : کراچی صفحہ اول