رینجرز اختیارات کو سودے بازی کیلئے استعمال نہ کیا جائے:آفاق احمد

رینجرز اختیارات کو سودے بازی کیلئے استعمال نہ کیا جائے:آفاق احمد

کراچی (اسٹاف رپورٹر) مہاجر قومی موومنٹ کے چیئرمین آفاق احمد نے کہا ہے کہ آصف علی زرداری کے تین قریبی دوست اغواء ہوئے ہیں ان کے غم میں ہم برابر کے شریک ہیں لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ رینجرز کے اختیارات کو بارگیننگ کے لئے ہتھیار کے طور پر استعمال کیاجائے، اور رینجرز کے اختیارات میں تعطل پیدا کرکے شہریوں کی زندگی سے نہ کھیلا جائے، اور جو لوگ اغواء ہورہے ہیں ان کے لئے قانون سازی کی جائے تاکہ یہ سلسلہ ہمیشہ کے لئے ختم ہوجائے، عزیر بلوچ نے اپنے بیان میں پیپلز پارٹی اور سندھ حکومت کے جن لوگوں کے نام سہولت کار کے طور پر لئے ہیں ان انھیں بھی گرفتار کرکے شامل تفتیش کیا جانا چاہئے میئر کراچی کو مکمل اختیارات دیئے جائیں،وزیر اعظم نواز شریف اس ریس کے گھوڑے ہیں جن پر کئی ممالک نے انویسٹمنٹ کر رکھی ہے میں نہیں سمجھتا کہ نواز شریف کے خلاف پانامہ کیس فیصلہ ہوگا۔ ان خیالات کا اظہارا نھوں نے اپنی رہائشگاہ پر بدھ کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ کامران رضوی اور دیگر رہنما بھی موجود تھے۔ آفاق احمد نے کہا کہ رینجرز اس شہر میں 1998ء سے خدمات انجام دے رہی ہے سندھ اور وفاق کی مرضی سے رینجرز کو کراچی میں تعینات کیا گیا تھا۔ آصف علی زرداری کے تین قریبی دوست اغواء ہوگئے ہیں یا گرفتار کرلئے گئے ہیں پیپلز پارٹی والوں کا کہنا ہے کہ انھیں حساس اداروں نے اغوا ء کیا ہے، انھوں نے ہم پیپلز پارٹی او ر اغواء ہونے والے افراد کے خاندان کے افراد کے ساتھ غم میں برابر کے شریک ہیں ، لاپتہ افراد کے حوالے سے سب سے زیادہ درد میں محسوس کرسکتا ہوں کیوں میری قوم مہاجر سب سے زیادہ اس حوالے سے متاثر ہوئے ہیں۔ لیکن اس کا مطلب یہ بھی نہیں ہے رینجرز کے اختیارات کو بارگیننگ کے لئے ہتھیار کے طور پر استعمال کیا جائے، رینجرز کے اختیارات میں تعطل پیدا کرکے شہریوں کی زندگیوں سے نہ کھیلا جائے اور رینجر ز کو فوری طور پر اختیارات دیئے جائیں، اور جو لو گ اغواء ہوئے ہیں یا لاپتہ ہو رہے ہیں ان کے لئے سنجیدگی سے قانون سازی کی جائے تاکہ آئندہ اسطرح کے واقعات پیش نہ آئیں اور ہمیشہ کے لئے یہ سلسلہ بند ہوجائے۔ایک سوال کے جواب میں آفاق احمد نے کہا کہ جسطرح سے ایم کیو ایم پر اور اس کے لوگوں پر راء سے تعلق کا الزام لگا اور اور ان کے خلاف کارروائی کی گئی اسی طرح سے عزیر بلوچ نے پیپلز پارٹی اور سندھ حکومت کے جن لوگوں کے نام لئے ہیں انھیں بھی گرفتار کرکے شامل تفتیش کیا جائے ایسا نہیں ہونا چاہئے کہ ایک جماعت کے خلاف کارروائی جائے اور دوسری کے خلاف نہیں یہاں سب کے ساتھ برابر کا سلوک کیا جانا چاہئے،اس ہی طر ح ایم کیو ایم کے جن لوگوں پر راء کے حوالے تعلق سامنے آیا ہے ان کے سول عدالتوں میں کیوں مقدمات چل رہے ہیں ان کے بھی مقدمات فوجی عدالتوں میں بھیجے جانے چاہیں۔ انھوں نے کہا کہ پولیس کو تو خودپیپلز پارٹی اور اس کی حکومت نے سیاسی بنیاد پر غیر موثر بنایا ہے۔ پولیس کو غیر منظم کئے جانے کی وجہ سے ہی رینجرز کی اس شہر میں ضرورت محسوس ہوئی کراچی کے لوگوں کو پولیس میں شامل نہیں کیا جاتا اور لاڑکانہ ، سکھر سندھ کے دیگر اضلاع میں پولیس کی بھرتیاں کرکے کراچی بھیج دیاجاتا ہے۔رینجرز کو اختیارات نہ دیئے جانے کی وجہ سے کراچی کے شہری ، صنعتکار، تاجر، اور مختلف شعبہ ہائے زندگی کے افراد سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں۔انھوں نے کہا کہ سندھ اور وفاق کے درمیان تناؤ کو ختم ہونا چاہئے یہ بات بھی ملک کے اچھی نہیں ہے۔ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ میئر کے اختیارات ناکافی ہیں انھیں مکمل اختیارات ملنے چاہیں ، اس ہی وجہ سے کراچی کچرے کے ڈھیر میں تبدیل ہوچکا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...