چارسدہ ،گورنمنٹ ہائی سکول امبارڈھیر کے استاد کی شاگرد پر تشدد ،بازو توڑ دیا

چارسدہ ،گورنمنٹ ہائی سکول امبارڈھیر کے استاد کی شاگرد پر تشدد ،بازو توڑ دیا

چارسدہ (بیورو رپورٹ) گورنمنٹ ہائی سکول امباڈھیر کے معلم نے نا کر دہ گناہ کے پاداش میں ساتویں جماعت کے 11سالہ طالب علم پر بے رحمانہ تشدد کیا جس کے نتیجے میں طالب علم کا ہاتھ ٹوٹ گیا۔ طالب علم عادل کے والد شیر محمد نے معلم صدیق کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا فیصلہ کر لیا ۔ چارسدہ پریس چیمبر میں میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے ساتویں جماعت کے طالب عادل کا کہنا تھا کہ مذکورہ معلم نے غیر حاضری کا بہانہ بنا کر اسے بدترین تشدد کا نشانہ بنایا جس کی وجہ سے اس کے ہاتھ کی ہڈی ٹوٹ گئی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس نے کسی قسم کی غیر حاضری نہیں کی تھی اور بار بار مذکورہ معلم کو یہ اس بات کی باور بھی کرائی کہ لیکن اس کے باوجود اسے بے رحمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا ۔ واقعہ کے بعد طالب علم کو ابتدائی طبی امداد کیلئے ڈسڑکٹ ہیڈ کوآرٹر ہسپتال پہنچایا گیا ۔ دوسری جانب طالب علم کے والد شیر محمد نے معلم صدیق کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا فیصلہ کر تے ہوئے کہا کہ بچوں پر جسمانی تشدد کی پابندی کے باوجود سکولوں میں بچوں کے ساتھ حیوانوں جیسا سلوک روا رکھا جا تا ہے ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ مذکورہ معلم کو فوری طور پر معطل کرکے ان کے خلاف محکمانہ کاروائی کی جائے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر