ضلع پشاور کا اجلاس،باہمی مشاورت سے جائیداد کی ٹرانسفر پر پابندی ختم

ضلع پشاور کا اجلاس،باہمی مشاورت سے جائیداد کی ٹرانسفر پر پابندی ختم

پشاور(کرائمز رپورٹر ) ضلع ناظم پشاور محمدعاصم خان کی زیر صدارت اجلاس ‘ باہمی مشاورت سے جائیداد کی ٹرانسفر پر پابندی ختم ٹرانسفر فیس مقرر کردی گئی ‘ضلع ناظم کاتمام بازاروں میں سٹریٹ لائٹس لگانے کا اعلان جبکہ تجاوزات آپریشن کے بعد بازاروں کی تزین و آرائش اور ترقیاتی منصوبوں کیلئے ضلع ناظم کا فنڈ دو کروڑ سے زیادہ کرنے کا اعلان ‘ تاجروں کاخوشی اظہار تفصیلات کے مطابق ضلع ناظم پشاور محمدعاصم خان کی زیر صدارت سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کی جائیداد کے ٹرانسفر فیس مقرر کرنے کے حوالے سے اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں نائب ناظم اعلی سید قاسم علی شاہ ‘ ڈائریکٹر کواڈرنیشن صاحبزادہ محمدطارق ٗ نائب ناظم ٹاؤن ون شعیب بنگش اور تنظیم تاجران کے صدر ملک مہر الہی ‘ جنرل سیکرٹری حاجی شوکت اور یگر نے خصوصی شرکت کی اجلاس میں سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کی جائیدادوں کی ٹرانسفر فیس مقررکرنے کے حوالے سے تفصیلی غور وخوص کیا گیا جبکہ بعدازاں باہمی رضامندی سے ٹرانسفر فیس مقر ر کی گئی جس کے تحت اے کلاس کیٹیگری کی دکانوں کیلئے ڈھائی لاکھ روپے ‘ بی کلاس کیٹیگری کیلئے ڈیڑھ لاکھ ‘ سی کیلئے ایک لاکھ اور ڈی کیلئے 75 ہزار روپے مقرر کیا گیا اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ درخواست دہندہ کو کوائف پورے ہونے کے بعد 15 دن کے اندر جائیداد ٹرانسفر کی جائیگی ضلع ناظم پشاورمحمدعاصم خان نے تاجران کے مطالبے پر تمام بازاروں میں سوڈیم سٹریٹ لائٹس کی تنصیب کے لئے نائب ناظم سید قاسم علی شاہ کو تاجران کے ساتھ بازار کا دورہ کرنے اور رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت جاری کیں تاکہ ان بازاروں میں فوری طور پر سوڈیم سٹریٹ لائٹس لگائی جاسکیں ‘ اسکے علاوہ ضلع ناظم نے تمام بازاروں میں جہاں پر تجاوزات ختم کی گئی ہیں انکی تزین وآرائش اور ترقیاتی کاموں کیلئے فنڈ دوکروڑ سے زیادہ کرنے کابھی اعلان کیا ضلع ناظم نے کہاکہ تاجر برادری کے ضلعی حکومت کے ساتھ بھرپور تعاون کے بدولت مسائل حل ہورہے ہیں اور تاجران کے مسائل کے حل کیلئے ضلعی حکومت تمام وسائل بروئے کار لارہی ہیں تاجروں نے ٹرانسفر پر پابندی ختم کرنے اورباہمی مشاورت سے ٹرانسفر فیس مقرر کرنے ‘ بازاروں میں سوڈیم سٹریٹ لائٹس لگانے اور ضلع ناظم کی جانب سے فنڈ میں اضافے پر خوشی کااظہار کرتے ہوئے ضلع ناظم کواپنی ہرممکن تعاون کا یقین دلایا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر