ٹی آئی پی اثاثوں پر قبضہ جیسے اوچھے ہتھکنڈوں سے باز رہیں ،عثمان شاہ

ٹی آئی پی اثاثوں پر قبضہ جیسے اوچھے ہتھکنڈوں سے باز رہیں ،عثمان شاہ

ہری پور(نامہ نگار )پی ٹی سی ایل سٹاف کالج اور این آر ٹی سی انتظامیہ ٹی آئی پی اثاثوں پر قبضے جیسے اوچھے ہتھکنڈوں سے باز رہیں ریاستی اداروں کے اس طرح کے تخریبی اقدامات کے خلاف ٹی آئی پی کے ورکر سیسہ پلائی دیوار ثابت ہونگے سٹاف کالج اور این آر ٹی سی انتظامیہ کے ایسے حربے ملکی قوانین کے ساتھ ساتھ عدالتی احکامات کی بھی کھلی خلاف ورزی کے زمرے میں آتے ہیں قبضہ مافیا کے خلاف ٹی آئی پی انتظامیہ کے بروقت اور قیمتی اثاثوں کے تحفظ کے لیے اقدامات قابل تحسین ہیں جس کے لیے ادارے کے محنت کشوں کا بھرپور تعاون جاری رہے گا ان خیالات کا اظہار ٹی آئی پی ورکر جوائنٹ ایکشن کونسل کے چیئرمین عثمان شاہ شیرازی نے ٹی آئی پی سٹاف ہاسٹل کے پچیس رکنی رہائشیوں کے وفد سے بات چیت کے دوران کیا جس کی سربراہی ہاسٹل کے رہائشی حکیم محمد قاسم کررہے تھے وفد نے انھیں مذکورہ اداروں کی طرف سے رات کی تاریکی میں ٹی آئی پی سٹاف ہاسٹل پر قبضے کے علاوہ یونین اور ٹی آئی پی کے دیگر دفاتر کے تالے توڑ کر اندر گھسنے اور سیکورٹی پر مامور سٹاف کو ڈرانے دھمکانے سے متعلق تفصیلا اگاہ کیا وفد نے اس تشویش کا اظہار بھی کیا کہ تما م اقدامات پولیس کی ناک تلے رونما ہوتے رہے مگر ان کی خاموشی باعث حیرت ہے تاہم ٹی آئی پی انتظامیہ نے اپنے بروقت اقدامات اور کوششوں کے ذریعہ مذکورہ اوچھے اور نام نہاد ہتھکنڈے ناکام بناڈالے جس پر وہ خراج تحسین کے مستحق ہیں وفد سے بات چیت کے دوران عثمان شاہ شیرازی نے انھیں یقین دلایا کہ ٹی آئی پی اور اس کے اثاثوں تحفظ کے لیے ادارے کے تمام محنت کش ٹی آئی پی انتظامیہ اور یونین کے شانہ بشانہ کھڑے ہوں گے اور ماضی کی طرح اپنا بھرپور فریضہ انجام دیتے رہیں گے اس موقع پر انھوں نے سٹاف کالج اور این آرٹی سی انتظامیہ کو خبر دار کیا کہ وہ ذمہ دار ریاستی اداروں کے طور پر ایسے اوچھے ہتھکنڈوں سے باز رہیں جن کے باعث اداروں کے درمیان تصادم یا امن وامان جیسی صورتحال کے خراب ہونے کا خدشہ پیدا ہو کیونکہ ادارے کی قیمتی اراضی اور اثاثوں کے تحفظ کے لیے عدالتوں نے حکم امتناعی جاری کررکھے ہیں اور مذکورہ اقدامات عدالتی حکم عدولی کے علاوہ ملکی آئین کی بھی خلاف ورزی کے زمرے میں آئے گا انھوں نے اس امر پر زور دیا کہ پی ٹی سی ایل انتظامیہ پشاور ہائی کورٹ کے احکامات کے مطابق کالونی بورڈ کے سٹاف کو فوری طور پر تنخواہوں کی ادائیگی کرے جو انھوں نے غیر قانونی طور پر گزشتہ دس ماہ سے روک رکھی ہیں جس کے باعث کالونی بورڈ ملازمین کے گھروں میں فاکوں کی کیفیت پید اہوگئی ہے اس موقع پر عثمان شاہ شیرازی نے این آر ٹی سی انتظامیہ کو بھی خبر دار کیا کہ وہ ٹیلی کام سکولوں کے بچوں کی فیسوں میں بے تحاشہ اضافہ کا فیصلہ واپس لے نیز ٹی آئی پی ورکر ز کے بچوں کے لیے رعائتی سہولت کا فیصلہ عدالت برقرار رکھے بصورت دیگر ٹی آئی پی ورکر این آر ٹی سی انتظامیہ کے اس ظالمانہ فیصلہ کے خلاف عدالتی دروازے پر ایک بار پھر دستک دینے کے لیے مجبور ہونگے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...