مودی سے بات کرنا آسان ہے سی ڈی اے سے انتہائی مشکل :سپیکر ایاز صادق

مودی سے بات کرنا آسان ہے سی ڈی اے سے انتہائی مشکل :سپیکر ایاز صادق

اسلام آباد (آئی این پی) قومی اسمبلی کے سپیکر سردار ایاز صادق نے وفاقی ترقیاتی ادارے کی کارکردگی کو ناقص قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مودی سے بات کرنا آسان ہے، سی ڈی اے سے انتہائی مشکل‘ نہ جانے سی ڈی اے میں کون سا خون دوڑ رہا ہے اور یہ کیا پانی پیتے ہیں کہ ان کو بات سمجھانا انتہائی مشکل ہوتا ہے‘ پاکستان آنے والے تمام غیر ملکی وفود بشمول یورپی یونین یہاں کے طور طریقوں‘ عوام کے طرز عمل اور رویوں کی انتہائی تعریف کرتے ہیں‘ میڈیا بھی پاکستان کے حقیقی تاثر کو اجاگر کرے۔وہ بدھ کو پارلیمنٹ ہاؤس میں پارلیمانی رپورٹرز ایسوسی ایشن کی تقریب حلف برداری سے خطاب کررہے تھے ۔ تقریب میں پرنسپل انفارمیشن آفیسر پی آئی ڈی راؤ تحسین احمد نے وزارت اطلاعات و نشریات کی نمائندگی کی سپیکر قومی اسمبلی نے پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں اور مجالس قائمہ کی کوریج کرنے والے صحافیوں پر مشتمل تھنک ٹینک بنانے کی تجویز دی ہے۔ یہ تھنک ٹینک بجٹ سمیت دیگر ایشوز پر قائمہ کمیٹیوں کو اپنی سفارشات دے سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ سارا سال پارلیمنٹ اور قائمہ کمیٹیوں کی کوریج کرنے والے نمائندہ سے زیادہ اہم کوئی تھنک ٹینک نہیں ہوسکتا نہ صرف یہ تمام کارروائی کو دیکھتے ہیں بلکہ اس کی خبریں بھی دیتے ہیں۔ انہوں نے سی ڈی اے کو وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر کیمرہ مینوں کیلئے پینے کے پانی اور پریس کانفرنس کے ڈائس کی تعمیر کے کام کو جلد مکمل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ مودی سے بات کرنا آسان ہے سی ڈی اے سے انتہائی مشکل ہے پتہ نہیں یہ کونسی زبان سمجھتا ہے ہر تعمیراتی کام میں تاخیر ہوتی ہے۔ انہوں نے صحافیوں کو پیشہ وارانہ ذمہ داریوں کے دوران رکاوٹوں کے باعث اور پارکنگ ایریا میں تجاوزات کرنے والے پولیس اہلکاروں کو بھی جواب دہ بنانے کا کہا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر