پاناما کیس کا فیصلہ ، آج سے پہلے اپریل کا مہینہ وزیراعظم نوازشریف کیلئے کیسا رہا ، کس کس وزیراعظم کو کیا کچھ دیکھنا پڑا؟ جان کر حکومتی حلقے پریشان ہوجائیں گے کیونکہ۔۔۔

پاناما کیس کا فیصلہ ، آج سے پہلے اپریل کا مہینہ وزیراعظم نوازشریف کیلئے کیسا ...
پاناما کیس کا فیصلہ ، آج سے پہلے اپریل کا مہینہ وزیراعظم نوازشریف کیلئے کیسا رہا ، کس کس وزیراعظم کو کیا کچھ دیکھنا پڑا؟ جان کر حکومتی حلقے پریشان ہوجائیں گے کیونکہ۔۔۔

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) اپریل کا مہینہ سیاستدانوں کے حوالے سے ہمیشہ سی ہی بھاری رہا ہے ، ماضی میں اپریل کے مہینے کے دوران وزیر اعظم نوازشریف کی حکومت کا خاتمہ کیا گیا تھا جب 18اپریل 1993ءمیں اس وقت کے صدر غلام اسحاق خان نے انہیں گھر بھیج دیا ۔اس کے علاوہ 6اپریل 2000ءمیں خصوصی عدالت نے انہیں طیارہ سازش کیس میں عمر قید کا حکم بھی سنایا تھا ۔

”دنیا نیوز “کے مطابق اپریل کا مہینہ ہمیشہ سے ہی پاکستانی سیاست کیلئے ستم گر رہا ہے ،اپریل کے مہینے میں ہی ایک پاکستانی سیاستدان کو پھانسی دی گئی جبکہ دو سیاستدانوں کو سز ائیں سنائی گئیں۔پاکستان کے پہلے منتخب وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کی سزا پر عملدرآمد اپریل میں ہوا۔ انہیں 4 اپریل 1979ءکو اڈیالہ جیل راولپنڈی میں پھانسی دی گئی۔

پاناما کیس کا فیصلہ آ ج کہاں سنایا جائے گا ، جاننے کیلئے یہاں کلک کریں

18 اپریل 1993ءکواس وقت کے صدر غلام اسحاق خان نے وزیر اعظم نواز شریف کو گھر بھیج دیا جبکہ سپریم کورٹ نے 26 اپریل 2012ءکو یوسف رضا گیلانی کو توہین عدالت پر سزا دی۔ ان کی حکومت بھی اسی مہینے میں ختم کی گئی۔

اور آج سپریم کورٹ پاناما کیس کا فیصلہ بھی سنانے جا رہا ہے تاہم دیکھنا یہ ہے کہ 2017ءکااپریل وزیر اعظم نواز شریف کیلئے کیسا ثابت ہو تا ہے ۔

مزید : قومی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...