وزیراعظم کی تقریر میں تضاد،نواز شریف صادق اور امین نہیں رہے:جسٹس آصف سعید کھوسہ کا اختلافی نوٹ

وزیراعظم کی تقریر میں تضاد،نواز شریف صادق اور امین نہیں رہے:جسٹس آصف سعید ...

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ میں پانامہ فیصلے پر دو ججز جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس گلزار نے اختلافی نوٹ لکھا جن میں سے جسٹس آصف سعید نے لکھا کہ ہم حقائق کی روشنی میں اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ میاں محمد نواز شریف اپنے دفاع میں خاطر خواہ ثبوت دینے میں ناکام رہے ہیں،قطری خط کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے اور قانون شہادت آرڈیننس 1898 کے تحت خط ثبوت کے طور پر قابل قبو ل نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس کھوسہ نے مزید لکھا کہ وزیراعظم کی قوم اور پالیمنٹ سے تقریر میں تضاد پایا گیا ہے،لہٰذا عدالت اس نتیجے پر پہنچی ہے کہ وزیراعظم صادق اور امین نہیں رہے اور آرٹیکل 63 ون ایف کے تحت ان کو قومی اسمبلی کی نشست سے نااہل قرار دینے کا حکم دیتے ہیں۔واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے تین ججز نے مزید تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی تشکیل دینے کا حکم دیا ہے۔

وزیراعظم بال بال بچ گئے، سپریم کورٹ کا پاناما کیس کی تحقیقات کیلئے 6 رکنی جے آئی ٹی بنانے، وزیراعظم ، حسن نواز اور حسین نواز کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے کا حکم

مزید : قومی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...