”دولت کے ہر ذخیرے کے پیچھے جرم کی ایک داستان ہوتی ہے۔۔۔“ سپریم کورٹ نے پانامہ لیکس کے فیصلے میں معروف ترین ناول کا ذکر چھیڑدیا

”دولت کے ہر ذخیرے کے پیچھے جرم کی ایک داستان ہوتی ہے۔۔۔“ سپریم کورٹ نے ...
”دولت کے ہر ذخیرے کے پیچھے جرم کی ایک داستان ہوتی ہے۔۔۔“ سپریم کورٹ نے پانامہ لیکس کے فیصلے میں معروف ترین ناول کا ذکر چھیڑدیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سپریم کورٹ نے پانامہ لیکس کا فیصلہ تو سنا دیا ہے لیکن اب یہ انکشاف ہوا ہے کہ فیصلے کے آغاز میں ہی شہرہ آفاق ناول ”گاڈ فادر“ کے آغاز میں استعمال ہونے والا جملہ استعمال کیا گیا ہے کہ ”ہر بڑی دولت کے پیچھے ایک جرم کی داستان ہوتی ہے۔“

نواز شریف وزیراعظم رہیں گے، سپریم کورٹ کا پاناما کیس کی تحقیقات کیلئے 6 رکنی جے آئی ٹی بنانے، وزیراعظم ، حسن نواز اور حسین نواز کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونے کا حکم

میڈیا رپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ نے پانامہ لیکس کے فیصلے کے آغاز میں ہی اطالوی ناول نگار ماریو پوزو کے ناول ”گاڈ فادر“ کا جملہ استعمال کیا گیاہے کہ ” دولت کے ہر ذخیرے کے پیچھے جرم کی داستان چھپی ہے۔“

واضح رہے کہ اطالوی ناول نگار ماریو پوزو کا ناول ”گاڈ فادر“ ایک مافیا ڈان کی کہانی ہے جس کا آغاز انہوں نے فرانسیسی ناول نگار بالزک کے اسی جملے سے کیا تھا جس کا ذکر سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں کیا ہے۔

ابھی مٹھائی بانٹ رہے ہیں کچھ دیر بعد شام غریباں ہوگی،شیخ رشیدکا پانامہ فیصلے پر پہلا ردعمل

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق یہ جملہ جسٹس آصف سعید کھوسہ نے استعمال کیا ہے اور یہ بھی کہا ہے کہ کیسا اتفاق ہے کہ یہ جملہ نواز شریف کے خلاف کیس پر صادر آتا ہے۔

مزید : قومی