قطر نے نمائندوں کی فہرست مسترد کر دی ، افغان حکام ، طالبان میں دوحہ مذاکرات منسوخ ، امریکہ کا اظہار تشویش، ڈائیلاگ کا نعم البدل نہیں مدد کو تیار ہیں: زلمے خلیل زاد

قطر نے نمائندوں کی فہرست مسترد کر دی ، افغان حکام ، طالبان میں دوحہ مذاکرات ...

کابل،واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی) طالبان اور افغان نمائندوں کے درمیان قطر میں ہونیوالے مذاکرات منسوخ کر دیئے گئے۔افغان میڈیا کا صدارتی حکام کے حوالے سے کہنا ہے کہ قطری حکومت نے افغان نمائندوں کی فہرست کو مسترد کر کے نئی فہرست بھیجی ہے جس میں افغانستان کے تمام شعبوں کی نمائندگی نہ ہونے پر افغان حکومت نے فہرست مسترد کردی۔افغان حکام کے مطابق قطری حکومت کا اقدام قابل قبول نہیں، قطر 250 افغان نمائندوں کو آنے کی اجازت دے۔افغان صدارتی حکام کا کہنا ہے کہ افغان حکومت کے مطالبات تسلیم نہ کرنے تک دوحہ مذاکرات منسوخ کیے ہیں۔دوسری طرف مذاکرات کے ملتوی ہونے پر امریکہ نے تشویش کا اظہارکیاہے ۔امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد کا کہنا ہے کہ مذاکرات کا کوئی نعم البدل نہیں، ضرورت ہوتوہم مدد کو تیارہیں۔تفصیلات کے مطابق زلمے خلیل زاد نے قطرمیں مذاکرات ملتوی ہونے پر مایوسی کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ فریقین سے رابطے میں ہیں اورمذاکرات کی حمایت کرتے ہیں۔زلمے خلیل زاد نے کہا کہ مذاکرات پائیدارامن اورسیاسی روڈمیپ کیلئے اہم ہوتے ہیں، مذاکرات کا کوئی نعم البدل نہیں، ضرورت ہوتوہم مدد کو تیارہیں۔یاد رہے کہ طالبان اور افغان نمائندوں کے درمیان ملاقات 20 اور 21 اپریل کو قطر میں ہونا تھی اور مذاکرات کیلئے افغان حکومت نے 250 رکنی فہرست تیار کی تھی۔افغان حکومت کی مذاکرات کیلئے تیار کی گئی فہرست پر طالبان نے تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ شادی یا کسی اور مناسبت سے دعوت اور مہمان نوازی کی تقریب نہیں کہ کابل انتظامیہ نے کانفرنس میں شرکت کے لیے 250 افراد کی فہرست جاری کی ہے۔

طالبان مذاکرات منسوخ

مزید : صفحہ اول