عمران کے دورہ میں مزید سی پیک منصوبوں کو فائنل کریں گے، چینی سفیر

عمران کے دورہ میں مزید سی پیک منصوبوں کو فائنل کریں گے، چینی سفیر

اسلام آباد(صباح نیوز)چینی سفیر یا جینگ نے ایک مرتبہ پھر پاکستان پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا چین پاک اقتصادی راہداری (سی پیک)کا سفر دونوں ممالک اور خطے کے لئے ترقی لایا ہے۔اسلام آباد میں سی پیک سیمینار سے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان دوسرے بیلٹ اینڈ روڈ سمٹ میں شرکت کریں گے۔ ہم پوری کوشش کررہے ہیں کہ نئی حکومت کے ساتھ سی پیک کی بہتری کے لیے اقدامات کریں۔چینی سفیر نے کہا کہ دونوں ممالک کی وزارتیں بھی آپس میں کام کررہی ہیں، سی پیک کو دونوں ممالک کا خوب ساتھ حاصل ہے۔ان کا کہنا تھا کہ چین کو پاکستان پر اعتماد ہے، وقت کے ساتھ ہماری دوستی مضبوط ہوتی جارہی ہے، سب سے اہم بات دونوں ممالک کا تعلق ہے، دونوں حکومتوں کے لئے معاشی ترقی اولین ترجیح ہے۔چینی سفیر یا جینگ نے کہا کہ 19 ارب ڈالر سے 13 ارب ڈالر کمرشل ذرائع سے آئیں گے، سی پیک پروجیکٹ کے تحت تین بڑے پاور پلانٹس بھی لگائے جائیں گے، ہر ایک پر دو ارب ڈالر سے زیادہ خرچ آئے گا۔انہوں نے کہا کہ آئندہ سات سال میں پاکستان سے سی پیک کا ایک پیسہ بھی وصول نہیں کیا جائے گا جبکہ اس منصوبے سے 7 لاکھ سے زائد افراد کو روزگار کے مواقع فراہم ہوں گے۔ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کے دورے میں سی پیک کے مزید منصوبوں کو حتمی شکل دی جائے گی۔چینی سفیر کا کہنا تھا کہ سی پیک کو ابھی مزید محنت درکار ہے، چین نے گوادر میں 150 بچوں کے لئے اسکول تعمیر کیا جسے اب وسعت دے دی گئی ہے اور اب اس میں 500 سے زائد بچے تعلیم حاصل کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ 15 سے زائد چینی کمپنیاں سی پیک پر کام کررہی ہیں، نئی حکومت کے ساتھ مزید دو بڑے منصوبوں پر کام کرہے ہیں جن میں سوشل اور صنعتی منصوبے شامل ہیں۔یا جینگ نے کہا کہ کپڑے کی 6 صنعتیں لاہور میں قائم کی جارہی ہیں جبکہ سوشل سیکٹر کی ترقی کے لیے ایک ملین ڈالر فراہم کیے جائیں گے۔انہوں نے کہاکہپاکستان کی معیشت نجی شعبے سے جڑی ہوئی ہے، چین اگلے تین سال میں 20 ہزار اسکولرشپس پاکستانی طلبہ کے لئے فراہم کرے گا۔

چینی سفیر

مزید : صفحہ آخر