پنجاب بھر میں وڈیولنک سماعت کی سہولت فراہم کی جا ئیگی : جسٹس محمد قاسم خان

پنجاب بھر میں وڈیولنک سماعت کی سہولت فراہم کی جا ئیگی : جسٹس محمد قاسم خان

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس محمد قاسم خان نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے مقدمات کے ٹرائل کے قوانین میں بہتری کی گنجائش ہے،دہشت گردی مقدمات میں گواہان کوجان کا خوف ہوتاہے ، دباؤ یا دیگر طریقوں سے یہ کیس کمزور کردئیے جاتے ہیں۔جلد ویڈیو لنک کے ذریعے سماعت کی سہولت پورے صوبے میں فراہم کی جائے گی،وہ پنجاب جوڈیشل اکیڈمی میں انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے ججوں کے تربیتی سیشن سے خطاب کررہے تھے ،انہوں نے کہا کہ انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے جج دور دراز کے علاقوں میں موجود گواہوں کی عدالت میں طلبی کی بجائے جدید ڈیوائسسز پر بیان قلمبند کرائیں، 400 کلومیٹر دور بیٹھے گواہ کو بار بار طلب کرنے سے ان کا مورال پست ہوتا ہے،لاہور کی انسداد دہشت گردی کی عدالتوں میں ویڈیو لنک کے ذریعے سماعت کی سہولت فراہم کرنے پر برطانوی حکام کے مشکور ہیں، جلد ویڈیو لنک کے ذریعے سماعت کی سہولت پورے صوبے میں فراہم کی جائے گی،دہشت گردی کے مقدمات سے منسلک گواہوں سمیت دیگر افراد کے تحفظ کے لئے قانون بن گیاہے،اس قانون کے اطلاق کے لئے متعلقہ حکام کی تربیت ضروری ہے،انہوں نے مزید کہا کہ ڈی جی جوڈیشل اکیڈمی اس حوالے سے تجاویز مرتب کرکے دیں تاکہ مزید بہتری لائی جاسکے۔تقریب میں انسداددہشت گردی کی عدالتوں کے ججوں ،ڈی جی جوڈیشل اکیڈمی نذیر احمد گجانہ اورانسداد دہشت گردی کے نظام عدل میں بہتری کے لئے تعاون کرنے والے غیر ملکی حکام نے بھی شرکت کی ۔

جسٹس قاسم خان

مزید : علاقائی