ڈسکہ، لاہور کے رہائشی میاں بیوی 2کمسن بیٹوں سمیت بیدردی سے قتل

  ڈسکہ، لاہور کے رہائشی میاں بیوی 2کمسن بیٹوں سمیت بیدردی سے قتل

  

ڈسکہ(نامہ نگار،تحصیل رپورٹر)قتل کی ایک لرزہ خیز واردات میں لاہور کے علاقے مزنگ کے رہائشی خاندان کے 4 افراد کوچھریوں کے پے در پے وار کر کے قتل کر دیاگیا۔قتل دو سگے بھائیوں نے مل کر کیا،ایک گرفتار جبکہ دوسرا فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق مزنگ لاہور کارہائشی50سالہ سعید اپنی بیوی 45سالہ سدرہ اور دو بیٹوں 13سالہ احمد سعید اور11سالہ عبدالرحیم سعیدکے ہمراہ ٹائل خریدنے کیلئے گوجرانوالہ گئے۔اس دوران وہ لاہور میں اپنے ہمسائے ظفر اللہ کے سٹی ڈسکہ کے علاقہ قاضی ٹاؤن میں واقع گھر میں رہائش پذیر ہوئے۔ سعید کے ہمسائے ظفر اللہ نے اپنے بھائی 18 سالہ مطیع رحمان کیساتھ مل کر سعید اور اس کی اہلیہ کے گلے کاٹ دئے جبکہ دو بچوں کو بھی چھریوں کے وار سے قتل کر ڈالا،ملزمان نے رات کے اندھیرے میں دونوں بچوں کی لاشو ں کو نہر میں بہا دیا۔اور فرار ہو گئے۔صبح و اقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس متحرک ہو گئی۔سعید اور اس کی بیوی سدرہ کی گلہ کٹی نعشو ں کو قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔بتایا گیا ہے کہ سٹی پولیس نے ملزم ظفر اللہ کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ اس کا بھائی تاحال مفرور ہے جس کے بارے میں شبہ ہے کہ وہ پسرور روانہ ہو گیا ہے۔پولیس کے مطابق گرفتار ملزم نے اپنے ابتدائی بیان میں اعتراف کیا ہے کہ اس کے سعید کی اہلیہ کیساتھ ناجائز مراسم تھے۔مقتول سعید کی ایک بیٹی زندہ بچی ہے جو کہ لاہور میں ہی رہائش پذیر ہے۔ پولیس نے بچوں کی نعشوں کی بازیابی کے لئے ٹیمیں روانہ کر دیں،جبکہ دوسرے ملزم مطیع رحمن کی گرفتاری کے لئے بھی چھاپے مارے جا رہے ہیں۔معلوم ہوا ہے کہ ملزم پسرور فرار ہو چکا ہے۔

ڈسکہ قتل واردات

مزید :

صفحہ آخر -