لیبر کی عدم دستیابی، اجازت ملنے کے باوجود تعمیراتی کام شروع نہ ہو سکے

    لیبر کی عدم دستیابی، اجازت ملنے کے باوجود تعمیراتی کام شروع نہ ہو سکے

  

لاہور (ڈویلپمنٹ سیل)ڈویلپرز، بلڈرزاور پراپرٹی کے دفاتر کھل گئے۔ڈی ایچ اے اور ایل ڈی اے میں پبلک ڈیلنگ بند ہونے کی وجہ سے رئیل اسٹیٹ ایجنٹس کی خوشیاں ادھور ی۔ڈی ایچ اے کے آپریشنل دفاتر کھولنے کا فیصلہ 25اپریل جبکہ ایل ڈی اے آج فیصلہ کرے گا۔تعمیرات کی اجازت ملنے کے باوجود لیبر نہ ہونے کی وجہ سے کام شروع کرنے میں شدید مشکلات۔مزدور طبقہ اپنے اپنے گاوں گیا ہوا ہے۔ٹرانسپورٹ کی بندش آڑے آنے لگی۔ڈی ایچ اے کے آپریشنل دفاتر بھی لاک ڈاؤن کی وجہ سے بند ہیں 25اپریل کو آپریشنل دفاتر کھلنے یا بند رہنے کا فیصلہ متوقع ہے۔ڈی ایچ اے اب سیکیورٹی اور مینٹنس کا عملہ ڈیوٹی دے رہا ہے۔ایل ڈی اے کے دفاترکھل گئے تھے۔3روز پہلے ایک ملازم میں کورونا کی تشخیص ہونے کے بعد 3روز کیلئے دوبارہ بند کر دیئے گئے ہیں۔آج 20اپریل کو دوبارہ فیصلہ ہوگا۔تعمیراتی شعبہ کی خوشیاں بھی ادھوری ہیں۔کیونکہ مزدور دستیاب نہیں ہیں۔تعمیراتی شعبہ میں مزدور کا اہم کردار ہے ڈویلپرز اور بلڈرز لیبر کے گاؤں سے آنے کے منتظر ہیں۔انہیں گورنمنٹ ٹر انسپورٹ کی سہولت فراہم کرے تو تعمیرات میں کام شروع ہوسکے۔

تعمیراتی کام

مزید :

صفحہ آخر -