ڈائریکٹوریٹ سکولز بحالی اچھا فیصلہ‘ مکمل اختیارات دئیے جائیں: پاکستان فورم

  ڈائریکٹوریٹ سکولز بحالی اچھا فیصلہ‘ مکمل اختیارات دئیے جائیں: پاکستان ...

  

ملتان (فورم رپورٹ: اعجاز مرتضیٰ)ڈویژنل ڈائریکٹو ریٹ آف سکولز سسٹم بحال ہونے سے تعلیمی صورتحال بہتر ہوگی‘ڈائریکٹرز کو مکمل اختیارات دئیے جائیں۔مسائل و (بقیہ نمبر6صفحہ6پر)

معاملات ڈویژن کی سطح پر ہی حل ہوں گے۔ اساتذہ و ملازمین کو ریلیف ملے گا۔ ان خیالات کا اظہار شعبہ تعلیم سے وابستہ شخصیات افسران و یونین عہدیداران نے”روزنامہ پاکستان ٹیلیفونک فورم“ میں کیا۔چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی ملتان محمد ریاض خان نے کہا کہ ڈویژنل ڈائریکٹوریٹ آف سکولز کی بحالی حکومت کا بہت اچھا اقدام ہے جس سے شعبہ تعلیم میں بہت بہتری آئے گی‘ اس سے اختیارات کی ڈویژن کی سطح پر تقسیم ہوگی اور بہت سے مسائل و معاملات ڈویژن کی سطح پر ہی حل ہو سکیں گے۔ اساتذہ و ملازمین کے انٹر ڈسٹرکٹ تبادلے ہوسکیں گے‘ پنشن‘ گریجویٹی اور ترقیوں کے کا فی حد تک معاملات ڈویژن کی سطح پر حل ہوں گے اور ڈویژنل ڈائریکٹرز کے تحت ہی ضلعی ایجوکیشن افسران خدمات سر انجام دیں گے۔سابق ایگزیکٹو ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر‘پرنسپل گورنمنٹ اسلامیہ ہائی سکول دولت گیٹ محمد رمضان انجم نے کہا کہ ڈویژنل ڈائریکٹو ریٹ آف سکولز سسٹم کی بحالی حکومت کا بہت اچھا فیصلہ ہے جس سے ڈویژن کی سطح پر اختیارات ڈائریکٹرز کو ملیں گے اور اس سے شعبہ ایجوکیشن میں بہتری آئے گی۔یہ سسٹم پہلے بھی رہا ہے اور اس کا بہت اچھا تجربہ رہا ہے۔حکومت نے ڈویژنل ڈائریکٹرز اور ایڈیشنل ڈائریکٹرز کی تعیناتیاں کر دی ہیں‘امید ہے کہ لاک ڈاؤن ختم ہونے کے بعد یہ سسٹم باقاعدہ کام شروع کر دے گا۔معروف ماہر تعلیم وڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر سیکنڈری ملتان راناولایت علی نے کہاہے کہ ڈویژنل ڈائریکٹوریٹ آف سکولز کا سسٹم جنوری 2001میں ختم ہوا اور اس کے بعدیکم ستمبر2001میں اضلاع کی سطح پر ایگزیکٹو ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر ز تعینات کئے گئے جنہیں محکمہ تعلیم سکولز و کالجز دونوں کا چارج دیا گیا۔ ملتان میں اس سسٹم کے تحت پہلے ایگزیکٹو ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر (ای ڈی او)پروفیسر حمید رضا صدیقی تعینات کئے گئے۔اس کے بعد محکمہ تعلیم سکولز اور کالجز کو الگ الگ کر دیا گیا۔اب تقریباً19سال کے بعد ڈویژنل ڈائریکٹوریٹ آف سکولز بحال کئے جا رہے ہیں تو اچھی بات ہے مگر ان ڈائریکٹرز کو مکمل اختیارات دئیے جائیں ورنہ ”آدھا تیتر‘آدھا بٹیر“ والی بات ہوگی اور محکمہ تعلیم سکولز کو الٹا شدید نقصان ہوگا‘ اس لئے ڈائریکٹرز کا 2000والا سٹیٹس مکمل طور پر بحال کیاجائے۔ایس ای ایس ٹیچرز ایسوسی ایشن صوبہ پنجاب کے سرپرست اعلی ٰ رانا محمد اسلم انجم‘ ضلعی صدر ملتان رانا دلشاد احمداور سیکرٹری اطلاعات ملتان ڈویژن راؤ ساجد مصطفی نے کہا کہ ڈویژنل ڈائریکٹو ریٹ آف سکولز سسٹم بحال ہونے سے تعلیمی صورتحال بہتر ہوگی لیکن اس کے لئے ڈائریکٹرز کو مکمل اختیارات دئیے جائیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ اساتذہ کے تبادلوں‘ترقیوں‘پنشن و گریجویٹی سمیت تمام مسائل و معاملات مقامی سطح پر ہی حل ہوں اور اساتذہ کو ریلیف ملے۔ یہ سسٹم پہلے بھی چلتا رہا ہے اور اب 19سال بعد بحال ہونے جا رہا ہے تو اس کواسی طرح بحال کیاجائے جس طرح یہ2000میں تھا۔ہم ڈویژنل ڈائریکٹوریٹ آف سکولزسسٹم میں حکام سے بھرپور تعاون کریں گے۔

پاکستان فورم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -