باپ نے 3سالہ معصوم بیٹے کو پھانسی دیدی‘ ملزم گرفتار

  باپ نے 3سالہ معصوم بیٹے کو پھانسی دیدی‘ ملزم گرفتار

  

رحیم یار خان (بیورورپورٹ) سنگدل باپ نے 3سالہ حقیقی بیٹے کوگلا دباکرموت کے گھاٹ اتار دیا، نعش گلے میں پھندا دے کرلٹکا دی،پولیس نے لاش تحویل میں لے پوسٹ(بقیہ نمبر13صفحہ6پر)

مارٹم کیلئے ہسپتال منتقل کر دی، ملزم گرفتار کر لیا تفصیل کے مطابق تھانہ صدر رحیم یارخان کی حدود موضع تھلواڑی رفیق آباد کی رہائشی پروین مائی نے پولیس کو دی جانے والی اپنی شکایت میں بیان کیا کہ اس کا شوہر ملزم لیاقت حسین اس کووالد عبدالخالق میکے لیجانے پر اکثر و بیشتر لڑائی جھگڑا کرتاتھا،گذشتہ سے پیوستہ شب اس کا والد عبدالخالق والدہ کو چوٹ لگنے کے باعث ہمراہ لیجانے کے لئے آیا اور میکے ہمراہ لے گیا جس کی رنجش ملزم نے دل میں رکھ لی اور گذشتہ روز ملزم لیاقت حسین نے اپنے سسرالیوں کو پھنسانے کی خاطر اپنے حقیقی بیٹے تین سالہ محمدشعبان کا گلا دبا کر موت کے گھاٹ اتار دیا اور نعش کو پھندا دے کر لٹکا دیا تاہم اس واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی ایس پی صدر سرکل رانا محمداکمل رسول نادر پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر رفیق آباد کے علاقہ میں پہنچ گئے اور نعش کو تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے شیخ زید ہسپتال منتقل کر دیااور ملزم لیاقت حسین کو گرفتار کر لیا۔ابتدائی تفتیش میں ملزم لیاقت حسین نے حقیقی بیٹے محمدشعبان کو جان سے مارنے کا اعتراف جرم کر لیا۔ ایس پی انوسٹی گیشن فراز احمد نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ سنگدل باپ ملزم لیاقت حسین نے سسرالیوں سے بدلہ لینے کی خاطر بیٹے کو قتل کر کے نعش لٹکادی،ملزم اور اس کی بیوی کے درمیان میکے میں کئی کئی روز تک رہنے پراکثر جھگڑا رہتا تھا، بیوی پروین مائی کی ر پورٹ پر پولیس نے گرفتار ملزم لیاقت حسین کے خلاف مقدمہ نمبری 139/20بجرم 302 ت پ درج کر کے کارروائی شروع کر دی ہے۔

پھانسی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -