بھارت میں غار میں رہنے والی دو خواتین اور چار غیر ملکی مردوں کو ڈھونڈ لیا گیا لیکن وہ وہاں کب سے رہ رہے تھے اور کیسے ؟ حیران کن تفصیلات

بھارت میں غار میں رہنے والی دو خواتین اور چار غیر ملکی مردوں کو ڈھونڈ لیا گیا ...
بھارت میں غار میں رہنے والی دو خواتین اور چار غیر ملکی مردوں کو ڈھونڈ لیا گیا لیکن وہ وہاں کب سے رہ رہے تھے اور کیسے ؟ حیران کن تفصیلات

  

رشی کیش (ڈیلی پاکستان آن لائن )بھارت میں عالمی وبا کورونا وائرس کے پھیلاﺅ کے باعث غار میں ڈیرہ ڈالنے والے چھ غیر ملکیوں کو آخر کار ڈھونڈ لیا گا اور انہیں قرنطینہ کر دیا گیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق چار مرد اور دو غیر ملکی خواتین دسمبر میں بھارت آئے تھے اور اس کے بعد دنیا بھر میں مہلک وبا پھیل گئی ، یہ تمام لوگ ہوٹل میں ٹھہرے ہوئے تھے تاہم پیسے ختم ہو جانے کے بعد وہ اتر کھنڈ کے علاقے رشی کیش کے نزدیک ایک غار میں پناہ گزین ہو گئے اور 24 مارچ سے وہیں ڈیرہ ڈالے ہوئے تھے تاہم علاقے کے رہائشیوں نے پولیس کو ان سے متعلق آگاہ کیا ۔

پولیس نے فوری کارروائی عمل میں لاتے ہوئے انہیں ڈھنوڈا اور قرنطینہ کر دیاہے ، ان افراد کا تعلق یوکرین ، ترکی ، امریکہ ، فرانس اور نیپال سے ہے ۔بھارتی پولیس کا کہناہے کہ وہ غار میں لکڑیاں جلا کر ہی اپنا کھانا پکا رہے تھے جبکہ پانی نزدیک ہی میں واقع گنگا سے لے کر آتے تھے ، جب انہیں پولیس سٹیشن لایا گیا تو انہوں نے بتایا کہ وہ 24 مارچ سے غار میں رہ رہے تھے جبکہ اس سے قبل وہ ” منی کی ریتی “ کے علاقے میں ایک ہوٹل میں رہائش پذیر تھ تاہم پیسے ختم ہونے پر انہیں یہ فیصلہ کرنا پڑا۔

بھارتی پولیس کا کہناہے کہ تمام افراد کو آشرم میں قرنطینہ کر دیا گیاہے تاہم کسی بھی غیر ملکی میں کورونا وائرس کی کوئی علامت ظاہر نہیں ہوئی ہے جبکہ ان کا طبی معائنہ بھی کروایا گیاہے ۔

مزید :

بین الاقوامی -