کورونا وائرس نے نشے کے عادی افراد کی حالت پتلی کر دی، بڑی مشکل میں پھنس گئے

کورونا وائرس نے نشے کے عادی افراد کی حالت پتلی کر دی، بڑی مشکل میں پھنس گئے
کورونا وائرس نے نشے کے عادی افراد کی حالت پتلی کر دی، بڑی مشکل میں پھنس گئے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کی وجہ سے جہاں دیگر کاروبار زندگی متاثر ہوئے ہیں وہیں اس موذی وباءنے منشیات کے عادی افراد کی بھی حالت پتلی کر دی ہے کیونکہ ملکوں ملکوں لاک ڈاﺅن کی وجہ سے منشیات کی ’سپلائی‘ بھی متاثر ہو رہی ہے اور منشیات ڈیلرز نے قیمتیں تین گنا تک بڑھا دی ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق منشیات کے خلاف کام کرنے والی ایک بین الاقوامی تنظیم نے بتایا ہے کہ ایک طرف کورونا وائرس اور لاک ڈاﺅن کی وجہ سے منشیات کا استعمال بہت بڑھ گیا ہے اور دوسری طرف سپلائی نہ ہونے سے ان کی قیمتیں تین گنا بڑھا دی گئی ہیں۔

تنظیم کا کہنا تھا کہ لاک ڈاﺅن کی وجہ سے لوگوں کا ہر دن ویک اینڈ بن چکا ہے۔ منشیات کے عادی افراد بھی گھروں میں فارغ بیٹھے ہیں چنانچہ وہ پہلے سے زیادہ منشیات کا استعمال کر رہے ہیں۔ پہلے سے تین گنا مہنگی منشیات خریدنے کی وجہ سے یہ لوگ زیادہ مقروض ہوتے چلے جا رہے ہیں۔ تنظیم کی ایک عہدیدار کلیئر کے کا کہنا تھا کہ ”مجھے خدشہ ہے کہ کورونا وائرس کی وباءکے بعد منشیات کی صورتحال ایک نئی وباءکی صورت میں سامنے آئے گی۔ ایک طرف اس کے انتہائی عادی افراد کی تعداد میں ہوشربا اضافے کا خطرہ ہے اور دوسری طرف نشے کے عادی افراد کے بہت زیادہ مقروض ہو کر جرائم کی طرف راغب ہونے کا خدشہ ہے۔“

مزید :

بین الاقوامی -