عراق کے فوجی اڈے پر حملہ، امریکا نے ملوث ہونے کی تردید کردی

عراق کے فوجی اڈے پر حملہ، امریکا نے ملوث ہونے کی تردید کردی
عراق کے فوجی اڈے پر حملہ، امریکا نے ملوث ہونے کی تردید کردی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

بغداد(ویب ڈیسک) عراق کے دارالحکومت بغداد میں فوجی اڈے پر فضائی حملے میں ایک شخص ہلاک جبکہ 7 زخمی ہوگئے،  امریکا نے بغداد کے فوجی اڈے پر حملے میں ملوث ہونے کی تردید کردی۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق رات گئے بغداد کے فوجی اڈے پر فضائی حملے ہوئے جس کے بعد خوفناک آگ بھڑک اٹھی، دھماکوں کی آوازیں دور دور تک سنی گئی۔ڈان نیوز کے مطابق   فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ فضائی حملے کا ذمہ دار کون تھا تاہم جب اے ایف پی نے اسرائیلی فوج سے رابطہ کرنے کی کوشش کی تو صیہونی فوج نے کہا کہ وہ ’غیر ملکی میڈیا میں شائع ہونے والی معلومات پر تبصرہ نہیں کرتے۔‘

عراقی فوج نے ایک بیان میں کہا کہ ’فضائی حملوں کی تحقیقات کی جارہی ہیں، دھماکے میں املاک کو نقصان پہنچا جبکہ متعدد لوگ زخمی ہوئے ہیں۔‘یاد رہے کہ امریکی میڈیا کے مطابق گزشتہ روز (19 اپریل) اسرائیل نے ایران کے صوبے اصفہان پر میزائل حملہ داغا تھا، جس کے بعد ایران اہلکار نے کہا کہ ملکی افواج نے اصفہان کی فضائی حدود سے تین ڈرون مار گرائے ہیں  ۔