وزیر خزانہ کی چینی ہم منصب سے ملاقات، سی پیک فیز 2 پر گفتگو 

وزیر خزانہ کی چینی ہم منصب سے ملاقات، سی پیک فیز 2 پر گفتگو 
وزیر خزانہ کی چینی ہم منصب سے ملاقات، سی پیک فیز 2 پر گفتگو 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے چینی ہم منصب سے ملاقات کرکے پاکستان کی ترقی میں چین کے تعاون کو سراہا اور سی پیک فیز 2 پر کام تیز کرنے کیلئے حکومتی عزم کا اعادہ کیا ہے۔
نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق ملاقات کے موقع پر وزیر خزانہ نے کہا کہ سی پیک کا فیز ون انفرااسٹرکچر کی تعمیر سے متعلق تھا جبکہ سی پیک فیز 2 اقتصادی زونز کی فعالیت سے متعلق ہوگا۔ پاکستان مالی سال 26-2025 کے دوران چینی پانڈا بانڈ لانچ کرنا چاہتا ہے۔ملاقات میں دونوں رہنماو¿ں نے عالمی اداروں میں تعاون جاری رکھنے کی ضرورت پر اتفاق کیا۔اس سے پہلے وزیر خزانہ نے عالمی بینک کے زیر اہتمام کانفرنس سے خطاب میں عالمی بینک کی رپورٹ کا حوالہ دیا تھا جس میں پاکستان کیلئے 2047 تک ایک اعلیٰ درمیانی آمدنی والا ملک بننے کا ایک واضح روڈ میپ پیش کیا گیا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ پاکستان کی معیشت 2047 تک 300 بلین ڈالر سے 3 ٹریلین تک بڑھنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔واشنگٹن میں چینی ٹی وی کو انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ ٹیکس نیٹ کو بڑھانے پر توجہ مرکوز ہے، پاکستان میں مہنگائی کی شرح کم کرنے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں، چین نے ہمیشہ پاکستان کی ترقی میں بھرپورکردار ادا کیا ہے۔وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ پاکستان طویل اور بڑے قرض کی تلاش کر رہا ہے، پاکستان اگلے پروگرام میں کم از کم 6 ارب ڈالر کا نیا ٹیب کھولے گا۔
ان کا کہنا تھا کہ قرض پر اتفاق ہوا تو اضافی فنانسنگ کی بھی درخواست کریں گے، رواں سال یا اگلے مالی سال کے دوران بڑا خطرہ نظر نہیں آرہا۔وزیرخزانہ محمد اورنگزیب نے کہا کہ آئی ایم ایف سمیت دیگر مالیاتی اداروں سے مثبت بات چیت رہی ہے۔وفاقی وزیر خزانہ نے ورلڈ بینک کے علاقائی نائب صدر برائے جنوبی ایشیا مسٹر مارٹن رائزر سے بھی ملاقات کی، ملاقات میں اصلاحات اور سرمایہ کاری پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

مزید :

بزنس -قومی -