کاشتکار کپاس کی فصل کو بارشوں کے نقصانات سے بچانے کے لیے بروقت اقدامات کریں: محکمہ زراعت

کاشتکار کپاس کی فصل کو بارشوں کے نقصانات سے بچانے کے لیے بروقت اقدامات کریں: ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(کامرس رپورٹر)محکمہ زراعت پنجاب کی طرف سے کپاس کے کاشتکاروں کو آگاہ کیا گیا ہے کہ کپاس کی فصل کو بارشوں کے نقصانات سے بچانے کے لیے بروقت اقدامات کریں۔ کپاس کی فصل اس وقت اہم مرحلہ پر ہے لہٰذا فصل کو بارشوں کے نقصانات سے بچانے کے لیے بھرپور نگہداشت کی ضرورت ہے۔ ترجمان کے مطابق جن کھیتوں میں بارش کا پانی کھڑا ہے اسے کسی نچلے کھیت میں نکالنے کے لیے فوری اقدامات کریں کیونکہ 24گھنٹے سے زیادہ پانی کھڑا ہونے پر پودوں کی نشوونما رک جاتی ہے اور پیداوار پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔اگر قریب کماد یا چارے کی فصل ہو تو پانی اس کھیت میں ڈال دیں اور اگر پانی کپاس کے کھیت سے باہر نہ نکالا جاسکتا ہو تو کھیت کے ایک طرف لمبائی کے رخ کھائی کھود کر پانی اس میں جمع کر دیں۔
ماہرین کے مطابق اگر فصل پیلی ہو جائے تو پانی نکالنے کے بعد زمین وتر آنے پر یوریا کا 2فیصد محلول بنا کر سپرے کریں تاکہ پودوں کی نشوونما دوبارہ شروع ہوجائے جبکہ ضرورت پڑنے پر 7دن بعد یوریا کے محلول کا دوبارہ سپرے کریں۔ کپاس کی فصل بارشوں کی وجہ سے اگر زیادہ متاثر ہوجائے تو اجزائے صغیرہ کا استعمال محکمہ زراعت کے مقامی زرعی ماہرین کے مشورہ سے کریں۔ ماہرین کے مطابق زیادہ گرم اور مرطوب موسمی حالات میں کپاس کی فصل پر سبز تیلا ، سفید مکھی اور لشکری سنڈی کے حملہ کا امکان بڑھ جاتا ہے لہٰذا کاشتکار ہفتہ میں دو بار فصل کی پیسٹ سکاو¿ٹنگ کریں اور حملہ کی صورت میں مقامی زرعی ماہرین کے مشورہ سے مناسب زہر کا سپرے کریں۔

مزید :

کامرس -