اساتذہ کے مسلسل تربیتی پروگرام کے تحت سرکاری سکولوں کی کارکردگی بہتر ہو چکی ، احسان بھٹہ

اساتذہ کے مسلسل تربیتی پروگرام کے تحت سرکاری سکولوں کی کارکردگی بہتر ہو چکی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)اساتذہ کے مسلسل تربیتی پروگرام(CPD) کے تحت سرکاری سکولوں کی کارکردگی 52 فیصد تک بہتر ہو چکی ہے اور کارکردگی مزید بہتر بنا نے کے لئے ڈسٹرکٹ ٹریننگ اینڈ سپورٹ سنٹر اور کلسٹر ٹریننگ اینڈ سپورٹ سنٹرز پرا یساتعلیمی ماحول تشکیل دیا جا رہا ہے جہاں اساتذہ کی تربیتی نشستیں منعقد کرواکر سی پی ڈی کے مطلوبہ اہداف حاصل کئے جا سکیں تاکہ سرکاری سکولوں میں تعلیمی معیار مزید بہترہو سکے یہ بات پروگرام ڈائریکٹر احسان بھٹہ نے ڈائریکٹوریٹ آف سٹاف ڈویلپمنٹ میںآل پنجاب ڈسٹرکٹ ٹریننگ اینڈ سپورٹ سنٹر اور کلسٹر ٹریننگ اینڈ سپورٹ سینٹر سربراہان کے پریذنٹیشن مقابلہ میںحصہ لینے والے ڈی ٹی ایس سی اور سی ٹی ایس سی کے سربراہان سے خطاب کرتے ہوئے کہی ان کا مزید کہنا تھاکہ فیلڈ میں اساتذہ کے مسلسل تربیتی پروگرام پر عملدرآمدبہتر بنا نے کے لئے ادارے کے سربراہان کونہ صرف اپنی ذمہ داریوں کا علم ہو نا چاہئے بلکہ ان کی کمیونیکیشن اور پریزینٹیشن مہارتیں بھی ہونی چاہئے تاکہ ضلعی حکومت سے ابلاغ کے علاوہ اپنے ماتحت افراد سے مو¿ثر انداز سے کام لے کر اساتذہ کی رہنمائی اور طلباءکی کارکردگی کے جائزہ کے علاوہ ان کے تربیتی پروگرام کے انتظامات بہتر طور سے کر سکیں۔
 ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ مقابلہ ڈی ٹی ایس سی اور سی ٹی ایس سی کے سربراہان کی کمیونیکشن سکلز کو بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کرے گا ۔ ڈائریکٹوریٹ آف سٹاف ڈویلپمنٹ میں منعقدہ اس مقابلے میں پنجاب بھر سے ڈویژنل لیول مقابلوں میں منتخب ہو نے والے ڈی ٹی ایس سی اور سی ٹی ایس سی کے سربراہان نے حصہ لیا ۔ ڈی ٹی ایس سی سربراہان کے پریزنٹیشن مقابلے میں بہاولپور ڈویژن سے بہاول نگر ڈسٹرکٹ کے ڈی ٹی ایس سی ہیڈ محمد جمیل نے پہلی، ساہیوال ڈویژن سے اکاڑہ ڈسٹرکٹ کے اسرار حسین نے دوسری اور لاہور ڈویژن سے سیدہ طاہرہ انجم نے تیسری پوزیشن حاصل کی ۔سی ٹی ایس سی سربراہان کے پریزنٹیشن مقابلے میں لاہور ڈویژن سے قصور ڈسٹرکٹ کے سیف الر حمان نے پہلی سرگودھا ڈویژن سے نعیم صابر نے دوسری اور گوجرانوالہ ڈویژن سے سیالکوٹ کی سی ٹی ایس سی سربراہ اسماءاکرم بٹ نے تیسری پوزیشن حا صل کی۔ پروگرام ڈائریکٹراحسان بھٹہ نے مقابلہ میں حصہ لینے والے میں ڈی ٹی ایس سی اور سی ٹی ایس سی کے سربراہان میں تعریفی اسناد اورپوزیشن ہولڈرز کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے شیلڈز تقسیم کیں۔