کون ،جا رہا،کون آرہا ہے،نظریں اسلام آباد پر جم گئیں

کون ،جا رہا،کون آرہا ہے،نظریں اسلام آباد پر جم گئیں

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(جاوید اقبال)وفاقی دارالحکومت میں حکومت اور "باغی"آمنے سامنے آجانے کے بعد شہر لاہور کی سٹرکوں پر ویرانی چھا گئی ، عام شہری ،تاجر ،آفیسر تمام باسی اپنے گھروں میں ٹی وی کے سامنے بیٹھ گئے اور نظروں کا مرکز اسلام آباد بن گیا ہے ۔گھروں میں ملکی حالات پر بات ہوتی رہی کہ اسلام آباد میں کیا ہوگا؟حکومت رہے گی؟سمیت وغیرہ وغیرہ ایشو ٹاک آن دی ٹاﺅن بن گئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں عمران خان اور طاہر القادری کی طرف سے حکومت کو دی گئی ڈیڈ لائن سے شہر لاہور کی سڑکوں پر ،بازاروں اور مارکیٹوں میں ویرانی چھا گئی ہے ۔سڑکوں پر ٹریفک نہ ہونے کے برابر تھی زیادہ ترمارکیٹیں شام میں ہی بند ہو گئیں ۔شہر میں کھانے پینے کی اشیاءکی مارکیٹوں ،فوڈسٹریٹ ،ہوٹلوں پارکوں میں رش نہ ہونے کے برابر تھا ، اکثریت ٹی وی پر اسلام آباد میں آزادی و انقلاب مارچ اور حکومت کی سرگرمیوں پرتبصرے کرتے رہے ۔بعض نے کہا کہ اسلام آباد میں کرفیو لگا دینا چاہیے جبکہ کچھ نے کہا کہ وزیر اعظم کو قربانی دے دینی چاہیے جبکہ بعض نے رائے دی کہ عمران خان اور طاہر القادری کا طرز عمل سیاسی اور جمہوری نہیں ہے معاملات کو بات چیت کے ذریعے حل کرلینا چاہیے۔

مزید :

صفحہ اول -