ایک لاکھ سے زائد آئی ڈی پیز کے شناختی کارڈ ہلاک متاثرین امداد سے محروم

ایک لاکھ سے زائد آئی ڈی پیز کے شناختی کارڈ ہلاک متاثرین امداد سے محروم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

               ڈیرہ اسماعیل خان(ڈسٹرکٹ رپورٹر)متاثرین شمالی وزیرستان کیایک لاکھ سے زائدشناختی کارڈبلاک ہونےکی وجہ سے متاثرین امدادسے محروم ہیں‘45فیصدمتاثرین آج بھی رجسٹریشن سے محروم ہیں۔دوہرے پتے کے شناختی کارڈرکھنے والے متاثرین کے مسائل حل کئے جائیں۔کرائے کے مکانوںمیںرہنے والے متاثرین کے بجلی کے بلزمعاف کئے جائیں۔ان خیالات کااظہارصدرمتاثرین شمالی وزیرستان ماسٹرشیرآدم وزیرنے یرہ یس کلب میںمنعقدہ پرےس کانفرنس کے دوران کےا۔اس موقع پر صدرڈےرہ پرےس کلب محمدرمضان سےماب کے علاوہ بڑی تعدادمیںمتاثرین شمالی وزیرستان موجودتھے ۔ماسٹرشیرآدم وزیرنے کہاکہ متاثرین شمالی وزیرستان نے انکی قیادت پراعتماد کےاہے۔متاثرین کے مسائل کے حل کیلئے شمالی وزیرستان کے تمام اقوام سے اےک اےک نمائندہ چوبیس رکنی کمیٹی میںشامل کےاگےاہے۔انہوںنے کہاکہ اورنگزیب داوڑنامی شخص اپنے آپکومتاثرین شمالی وزیرستان کامشرظاہرکررہاہے جونام نہادہے۔اسکی اس حرکت سے متاثرین میںانتشارپھےل رہاہے۔اسکے خلاف ہم قانونی چارہ جوئی کرینگے۔انہوںنے کہاکہ اس وقت اےک لاکھ سے زائد متاثرین شمالی وزیرستان کے شناختی کارڈبلاک ہےںجسکی وجہ سے وہ امدادسے محروم ہےں۔ان شناختی کارڈکواوپن کےا جائے ۔ میرعلی اورمیرانشاہ کے سوادےگرعلاقوںکے 45فیصدمتاثرین شمالی وزیرستان رجسٹریشن سے محروم ہےں۔دوہرے پتے کے شناختی کارڈرکھنے والے متاثرین کی رجسٹریشن کامسئلہ حل کےاجائے۔انہوںنے کہاکہ انکی نقل مکانی امن کےلئے ہے۔انہوںنے کہاکہ ڈےرہ اسماعےل خان انتظامےہ کے مشکورہےںکہ انکی بدولت انکے مسائل کم ہوئے ہےں۔صحت کی سہولیات مہےاکی جارہی ہےں۔بنوںمیںموبائل سمزکے ذرےعے متاثرین کورقم کی ادائےگی کاسلسلہ جاری ہے۔جبکہ ڈےرہ اسماعےل خان میںموبائل سمزکے ذرےعے رقم کی ادائےگی نہےںکی گئی۔اس مسئلے کوبھی حل کیاجائے۔
شناختی کارڈ بلاک

 

مزید :

علاقائی -