بے وفا شوہروں کی بھاری اکثریت اپنی بیگمات کے سامنے یہ ایک ہی بہانہ بناتے ہیں، وہ بہانہ کیا ہے؟ سائنسدانوں نے پول کھول دیا

بے وفا شوہروں کی بھاری اکثریت اپنی بیگمات کے سامنے یہ ایک ہی بہانہ بناتے ہیں، ...
بے وفا شوہروں کی بھاری اکثریت اپنی بیگمات کے سامنے یہ ایک ہی بہانہ بناتے ہیں، وہ بہانہ کیا ہے؟ سائنسدانوں نے پول کھول دیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) بیویوں سے بے وفائی کرنے والے شوہر دیر سے گھر آنے کے لیے مختلف بہانے تراشتے ہیں۔ماہرین نے اس حوالے سے ایک سروے کیا ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ ایسے مردبیوی کو دھوکا دینے کے لیے کون سا بہانہ سب سے زیادہ استعمال کرتے ہیں۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق اس تحقیقاتی سروے میں بتایا گیا ہے کہ 34فیصد مرد گھر سے باہر زائد وقت گزارنے کے لیے اپنی بیوی کو یہ جھوٹ بولتے ہیں کہ ”میں گولف کھیل رہا ہوں۔“حالانکہ یہ وقت دراصل وہ کسی اور خاتون کے ساتھ گزار رہے ہوتے ہیں۔

ایسا طریقہ مارکیٹ میں آگیا کہ اب کوئی اپنے ہمسفر سے بے وفائی کرنے کا سوچے بھی نہ کیونکہ۔۔۔

دوسرے زیادہ استعمال کیے جانے والے بہانوں میں ”بزنس میٹنگ میں ہوں“ ”آج دفتر میں کام زیادہ ہے“ ”دوستوں کے ساتھ باہر ہوں“ ”جم جا رہا ہوں“ اور”گھر کی روزمرہ اشیاءکی شاپنگ کر رہا ہوں“ شامل ہیں۔ رپورٹ کے مطابق تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ کرسچین گرانٹ کا کہنا ہے کہ ”گولف کا بہانہ مرد اس لیے زیادہ استعمال کرتے ہیں کیونکہ یہ ان کے لیے سب سے زیادہ فائدہ مند ہوتا ہے۔ اس بہانے سے انہیں گھر سے باہر گزارنے کے لیے کافی وقت مل جاتا ہے اور بار بار فون پر رابطہ نہ کرنے کا بہانہ بھی مل جاتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ ایک ایسا بہانہ ہے جو بکثرت استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اس پر بیوی یہ نہیں کہہ سکتی کہ روز یہ کام کیوں کرتے ہو۔ اگر کوئی شخص بزنس میٹنگ، دفتر میں زیادہ کام یا دیگر بہانے استعمال کرتے ہیں تو ایک وقت آئے گا جب بیوی شک کرے گی اور سوال کرے گی کہ تمہاری ہی روز بزنس میٹنگ ہوتی ہے یا روزانہ ہی دفتر میں زیادہ کام ہوتا ہے؟گولف چونکہ مردوں میں بہت مقبول کھیل ہے اس لیے بیوی کبھی شوہر پر شک نہیں کرتی اور وہ اس کی کھیل سے پسندیدگی کا احترام کرتے ہوئے اسے وقت دیتی ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -