عدلیہ کے خلافریفرنس سیاسی تاریخ کا انوکھا کارنامہ ہے

عدلیہ کے خلافریفرنس سیاسی تاریخ کا انوکھا کارنامہ ہے

لاہور(نمائندہ خصوصی) تحریک انصاف سنٹرل پنجاب کے صدر عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ سپیکر قومی اسمبلی کی طرف سے عدلیہ کے خلاف ریفرنس ملکی سیاسی تاریخ کا انوکھا کارنامہ ہے ،اندرون خانہ وفاداریوں کا یقین دلانے والے اور چوری شدہ مینڈیٹ کے حامل سپیکر ایاز صادق درحقیقت نظام گول کرنے والوں کا مہرہ بن گئے ہیں انہیں اپنے ماضی کے سیاسی خطاب سامنے رکھنے چاہئیں اور شریف خاندان سے وفاداری نبھانے کا" تمغہ" قبول کرنا چاہیے عبدالعلیم خان نے مختلف اضلا ع کے پارٹی رہنماؤں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میاں نواز شریف کی مثال اس ضدی بچے جیسی ہے جو آؤٹ ہونے کے باوجود کھیلتا ہے نہ کھیلنے دیتا ہے اور یہ کند ذہن اور ضدی بچہ اپنی عدم موجودگی میں سارے نظام کو ہی لپیٹنے کے چکر میں ہے انہیں علم ہونا چاہیے کہ اب عوام جابر حکمرانوں کے سامنے ڈٹ کر اٹھ کھڑی ہوئی ہے انہوں نے کہاکہ درحقیقت لوٹی ہوئی دولت سے لدا ٹائی ٹینک آخری ہچکولے لے رہا ہے جو جلد ڈوب جائے گا اور شفافیت کے دعویداروں کے ٹھیکیدار کٹہروں میں کھڑے ہو کر خود اپنی کرپشن کی داستانیں بیان کریں گے عبدالعلیم خان نے کہا کہ سپریم کورٹ کے 5معزز جج صاحبان نے اپنے بہادرانہ فیصلے سے ساری قوم کو بیدار کر دیا ہے ججوں نے عدلیہ کا وقار بلند کیا اور تاریخ کے سنہری باب رقم کیے ہیں جنہوں نے نواز شریف کا قوم کے سامنے اصل چہرہ بے نقاب کر دیا ہے اور بچہ بچہ جان چکا ہے شریفوں نے بدمعاشی سے کرپشن میں نام کمایا انہوں نے کہا کہ میاں صاحب بتائیں کہ وہ کونسے طلسماتی کاروبار تھے جو نقصان میں بھی ہوں تو بندہ ارب پتی ہو جاتا ہے عبدالعلیم خان نے کہا کہ میاں صاحب کو علم ہونا چاہیے کہ ملک شخصیات سے نہیں نظام سے چلا کرتے ہیں اب انہوں نے عدلیہ کو نشانہ بنانے کیلئے درباری سپیکر کی خدما ت حاصل کر لی ہیں جو ساری قومی اسمبلی کیلئے شرم اور افسوس کا مقام ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1