تپ دق کے خاتمے کے لیے نجی اداروے بھی ذمہ داری پوری کریں:صدر ممنون حسین

تپ دق کے خاتمے کے لیے نجی اداروے بھی ذمہ داری پوری کریں:صدر ممنون حسین

کراچی (اسٹاف رپورٹر)صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ تپ دق کے خاتمے کے لیے سرکاری اداروں کے ساتھ ساتھ نجی ادارے بھی اپنی ذمہ داری پوری کریں۔ اس سلسلے میں انڈس اسپتال نے اچھی مثال قائم کی ہے جس کی پیروی کی جانی چاہئے۔ صدر مملکت نے یہ بات ہفتے کے روز مزار قائد اعظم پر انسداد ٹی بی کی قومی مہم کے افتتاح کے بعد ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر انڈس اسپتال کے روح رواں ڈاکٹر عبدالباری خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ گورنر سندھ محمد زبیر بھی تقریب میں موجود تھے۔ صدر مملکت نے اس موقع پر ڈبلیو ایچ آو کے عالمی فنڈ کے ذریعے ملنے والے دس دس موبائل یونٹس کا بھی افتتاح کیا جن میں ایکسرے سمیت ٹی بی کی تشخیص کی پوری لیباریٹری کی سہولت دستیاب ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ عوام کو متعدی امراض سے بچانے کے لیے ضروری ہے کہ انھیں حفظان صحت کے اصولوں سے روشناس کرایا جائے۔ اس مقصد کے لیے ٹی بی مٹا پروگرام کے رضا کار اہم کردار ادا کرسکتے ہیں۔ صدر مملکت نے کہا کہ زندہ معاشروں کی یہ خوبی ہے کہ قومی ذمہ داریوں کی بجا آوری میں پیش پیش رہتے ہیں۔ انھوں نی توقع ظاہر کی کہ ٹی بی مٹا مہم کے ذریعے کراچی سے بہت جلد ٹی بی کا خاتمہ کردیا جائے گا۔ اس کے بعد ملک کے دیگر حصوں میں بھی یہ مہم کامیابی سے ہمکنار ہوگی۔ صدر مملکت نے کہا کہ مزار قائد اعظم سے اہم قومی مہم کی ابتدا اس بات کی علامت ہے کہ یہ مہم بھی قائد اعظم کے عزم صمیم کی پیروی کرتے ہوئے اپنے مقاصد حاصل کرے گی۔ صدر مملکت کے خطاب سے قبل ٹی بی مٹا مہم کے برانڈ ایمبیسیڈر اور قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان یونس خان اور اسکولوں کی بچیوں نے حاضرین سے ٹ بی خاتمے کے لیے چلائی جانے والی مہم میں بھرپور تعاون کا عہد لیا۔

مزید : کراچی صفحہ اول