گیس منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کے لئے پائپ لائن کی سپلائی شروع

گیس منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کے لئے پائپ لائن کی سپلائی شروع

صوابی(بیورورپورٹ) صوابی کے حلقہ این اے 13صوابی3میں وفاقی حکومت کی فنڈ سے منظور کر دہ ڈیڑ ھ ارب روپے کی لاگت سے سوئی گیس کے منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کے لئے گیس پائپ لائن کی سپلائی شروع ہو گئی ۔ جب کہ سپیکر پختونخوا اسمبلی اسد قیصر کی جانب سے جمع شدہ فنڈ سے بھی گیس پائپ لائن گذشتہ روز موضع مرغز پہنچا دی گئی این اے 13میں یو سی مانکی ، تورڈھیر ، بیکا ، جلبئی ، جلسئی ، ٹھنڈ کوئی ، مرغز ، کلابٹ ، زروبی اور کوٹھا سمیت مختلف مضافات گیس کی سہولیات سے محروم ہے ان علاقوں کو گیس کی فراہمی کے لئے اقتدار میں آنے پر سپیکر پختونخوا اسمبلی نے پہلے مرحلے میں تیس کروڑ روپے فنڈ جمع کرائی تھی لیکن وفاق کی جانب سے پابندی لگنے پر اس کے خلاف ایم این اے عاقب اللہ نے عدالت میں رٹ دائر کر دی اور عدالت نے ان کے حق میں فیصلہ دیدیا اور یوں محکمہ سوئی گیس کے حکام بالا نے سپیکر پختونخوا اسمبلی اسد قیصر کی فنڈ سے گذشتہ روز محکمہ سوئی گیس کی جانب سے پائپ لائن موضع مرغز پہنچا دی گئی اسی طرح مسلم لیگ ن ضلع صوابی کے رہنماؤں حاجی سجاد خان ، حاجی افتخار خان ، حاجی دلدار خان ، ایم پی اے شیراز خان ، انتظار خان مرغز ، راشد سہیل اور دیگر نے گیس کے منصوبے کے لئے وفاق سے فنڈ مختص کرنے کے لئے صوبائی صدر انجینئر امیر مقام کے ساتھ مسلسل رابطہ رکھا اور اس کے نتیجے میں انجینئر امیر مقام نے وفاق سے صوابی کی این اے 13 کے لئے گیس کے منصوبے کو منظور کر وایا اور اس کے لئے وفاقی حکومت نے ایک ارب ، چالیس کروڑ آٹھاسی لاکھ پچاس ہزار روپے مختص کر دیئے ہفتہ کی علی الصبح ایک ٹریلا پائپ لائن موضع مرغز پہنچا کر مسلم لیگ ن کے حاجی سجاد خان ، انتظار خان اور راشد سہیل ایڈوکیٹ نے وصول کیا اس دوران ڈی ایس پی صوابی اظہار شاہ خان کی قیادت میں پولیس کی بھاری نفری پہنچ گئی موقع پر موجود مسلم لیگ کے رہنماؤں انتظار خان اور راشد سہیل نے پولیس پر واضح کیا کہ یہ پائپ لائن وفاقی حکومت کی جانب سے بھجوائی گئی ہے اور اس حوالے سے پولیس محکمہ سوئی گیس کے جی ایم اور ایکسین سے خود رابطہ کر کے تصدیق کر وائیں۔ ایک اخباری بیان میں انہوں نے کہا کہ پولیس نے حکومتی ارکان کی ایماء پر پائپ لائن اُٹھانے کی کوشش کی لیکن عوامی احتجاج پر یہ کوشش ناکام ہو ئی انہوں نے کہا کہ ایکسین ساجد نعمان نے پائپ لائن وصول کرنے کے لئے ہمارے ساتھ رابطہ کیا جس کے مطابق ہم نے پائپ لائن مین روڈ پر اُتار دی لیکن پولیس نے حکومتی ارکان کی ایماء پر کھلی دہشت گردی کامظاہرہ کیا اس کی ہم مذمت کر تے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ روز سپیکر کے فنڈ سے جو پائپ لائن موضع مرغز آئے تھے ہم نے اس میں مداخلت کی نہ ہی اسے اُٹھانے کی کوشش کی کیونکہ یہ ان کا قانونی اور آئینی حق ہے ان کو اپنے فنڈ سے اور ہمیں وفاقی حکومت کے فنڈ سے پائپ لائن ملیں گے انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن پورے این اے 13میں گیس پائپ لائن بچھا کر غریب عوام کو یہ سہولت فراہم کرئے گی۔ اور اس کا سارا کریڈٹ مسلم لیگ ن کی وفاقی حکومت اور صوبائی صدر انجینئر امیر مقام کو جارہا ہے۔ #

مزید : پشاورصفحہ آخر