ڈینگی پر بڑا بریک تھرو، کے پی حکومت پنجاب سے مدد لینے پر رضامند

ڈینگی پر بڑا بریک تھرو، کے پی حکومت پنجاب سے مدد لینے پر رضامند
ڈینگی پر بڑا بریک تھرو، کے پی حکومت پنجاب سے مدد لینے پر رضامند

  

پشاور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پشاور میں ڈینگی کے معاملے پرحکومت پنجاب اور خیبر پختونخوا میں پیدا ہونے والا ڈیڈ لاک ختم ہوگیا ہے جس کے بعد پشاور کے لوگوں کو ڈینگی سے چھٹکارا ملنے کی امید پیدا ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر صحت پنجاب خواجہ عمران نذیر کا خیبر پختونخوا کے ہم منصب سے ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس میں شہرام ترکئی ڈینگی کے معاملے پر پنجاب سے مدد لینے پر رضا مند ہوگئے ۔ اس موقع پر وزیر صحت پنجاب خواجہ عمران نذیر نے کہا کہ سیاست نہیں کرنا چاہتے ، عوام کی خدمت کیلئے آئے ہیں، موبائل یونٹس اور عملہ خیبر پختونخوا حکومت کے حوالے کرکے واپس چلا جاﺅں گا۔ خواجہ عمران نذیر نے بتایا کہ انہوں نے شہرام ترکئی سے کہا ہے کہ وہ پنجاب سے سہولیات لے لیں اور ان کے معاملات خود ہی دیکھیں ۔

محکمہ صحت پنجاب کا کہنا ہے کہ پنجاب حکومت نے جدید آلات سے لیس 8 ایمبولنسز خیبر پختونخوا بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے جن میں 3 سی بی سی تجزیاتی مشینیں اور ڈینگی ٹیسٹ کٹس شامل ہیں۔ دو موبائل ہیلتھ یونٹس آج ہی کے پی روانہ کردیے جائیں گے۔

واضح رہے کہ ڈینگی کے باعث پشاور میں 800 سے زائد افراد متاثر ہو چکے ہیں۔ پنجاب حکومت کی جانب سے موبائل ہیلتھ یونٹس اور طبی عملہ جمعہ کو پشاور بھیجا گیا تھا لیکن خیبر پختونخوا حکومت نے ان کی مدد لینے سے انکار کردیا تھا۔ خیبر پختونخوا حکومت کی اس حرکت پر پنجاب کے طبی عملے نے تہکال میں ہی موبائل ہیلتھ یونٹس کے ذریعے لوگوں کو طبی امداد کی فراہمی شروع کردی تھی ۔

مزید : پشاور /اہم خبریں