نواز شریف نے این اے 120 کو جھوٹ اور کرپشن کے سوا کچھ نہیں دیا ،عوام جماعت اسلامی کے امیدوار کو ووٹ دیں :سینیٹر سراج الحق

نواز شریف نے این اے 120 کو جھوٹ اور کرپشن کے سوا کچھ نہیں دیا ،عوام جماعت ...
نواز شریف نے این اے 120 کو جھوٹ اور کرپشن کے سوا کچھ نہیں دیا ،عوام جماعت اسلامی کے امیدوار کو ووٹ دیں :سینیٹر سراج الحق

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے این اے 120کے مرکزی انتخابی دفتر میں حلقے کے نامزد امیدوار ضیاء الدین انصاری ایڈووکیٹ اور امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد کے ساتھ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جماعت اسلامی لاہو ر نے این اے 120سے ضیاء الدین انصاری ایڈووکیٹ کو اپنا امیدوار انامزد کیا ہے جو کہ ایک دیانتدار لیڈر ہے اور وہ اس سے پہلے بھی طلبہ ، وکلاء اور عوامی لیڈر رہے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ میں این اے 120کی عوام سے اپیل کرتا ہوں کہ کرپشن سے پاک اور خوشحال پاکستان کے لیے ضیاء الدین انصاری ایڈووکیٹ کو ووٹ دیں تاکہ وہ اسمبلی میں جا کر اس حلقے کی مظلوم عوام کے لیے آواز بلند کر سکیں اور ان کے مسائل کے حل کیلئے اپنی توانا ئیاں صرف کر یں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوام نے اس سے پہلے تمام پارٹیوں کو آزما لیا ہے لیکن کسی پارٹی کے کسی لیڈر بشمول سابق نااہل وزیر اعظم نے سوائے کرپشن اور جھوٹ کی سیاست کے اس حلقے کی عوام کو کچھ نہیں دیا ۔ انہوں نے کہا کہ شریف خاندان کا احتساب عدالتوں میں پیش نہ ہونا خود اپنے جرائم کا اعتراف کرنے کے متراد ف ہے , اگر حکومت خود اداروں اور ان کے فیصلوں کا احترام نہیں کرے گی تو یہ کلچر پاکستان کی بقاء کے خطرناک ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے اندر جتنے حادثات اور واقعات ہوتے ہیں ان پر گرینڈ کمیشن بننا چاہیے ,جو حادثات کی حقیقت کو عوام کے سامنے رکھے اور مجرموں کے لیے سزا تجویز کرے ۔انہوں نے کہا کہ کشمیر پاکستان کے لیے زندگی اور موت کا مسئلہ ہے ,جو بھی سازش کشمیر میں جدوجہد کو سبوتاژ کرنے کیلئے سامنے آئے گی ہم اس کے لیے آہنی دیوار ثابت ہوں گے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کو محمود اچکزائی کے کشمیر کے متعلق بیان پر اپنی پوزیشن واضح کرنی چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ ایک خاموش سازش کے تحت سے تعلیمی نصاب سے اسلام پاکستان اورپاک فوج سے متعلق مواد کو خارج کرنانظر یہ پاکستان کے ساتھ غداری ہے ۔ انہوں نے آئین کے اندر ترمیم کے لیے سازش تیار کی جا رہی ہے ہم خبردار کرتے ہیں کہ ملک کے آئین کو اپنے مفاد کے تبدیل کرنے کی کوشش کی گئی تو محب وطن قوتیں رکاوٹ بنیں گی ,آئین پاکستان میں چاروں صوبوں کو آپس میں جوڑا ہوا ہے, اگر اس کو چھڑا گیا تو فیڈریشن خطرے میں پڑ سکتی ہے لہذا حکومت اپنا رویہ تبدیل کرے ۔

مزید : لاہور