”میرے ساتھ امتیاز سلوک کیا گیا اور۔۔۔“ شرجیل خان کو بحالی پروگرام ملتے ہی سلمان بٹ بھی پھٹ پڑے

”میرے ساتھ امتیاز سلوک کیا گیا اور۔۔۔“ شرجیل خان کو بحالی پروگرام ملتے ہی ...
”میرے ساتھ امتیاز سلوک کیا گیا اور۔۔۔“ شرجیل خان کو بحالی پروگرام ملتے ہی سلمان بٹ بھی پھٹ پڑے

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان سلمان بٹ نے ماضی کے بورڈ حکام پر امتیازی سلوک کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک کھلاڑی کیلئے الگ اور دوسروں کیلئے الگ رویہ رکھا گیا۔

تفصیلات کے مطابق نجی خبر رساں ادارے کو دئیے گئے انٹرویو میں سلمان بٹ نے محمد عامر کو خصوصی رعایت دینے کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ میری 5سال کی سزا مکمل ہوگئی تھی جس کے بعد ہرسال ڈومیسٹک کرکٹ میں تسلسل کے ساتھ عمدہ کارکردگی کا بھی مظاہرہ کیا لیکن پھر بھی میرے معاملے میں امتیازی سلوک کیوں کیا گیا، اس کا جواب سابق چیئرمین پی سی بی شہریار خان اور نجم سیٹھی ہی دے سکتے ہیں کہ کیوں ایک کھلاڑی کیلئے الگ اور دوسروں کیلئے الگ رویہ رکھا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ میں نے ڈومیسٹک کرکٹ میں اپنی ذاتی کارکردگی کے حوالے سے کوئی کسر نہیں چھوڑی، کوئی بھی سمجھ سکتا ہے کہ میری ٹیم میں جگہ بنتی ہے یا نہیں، ورلڈکپ میں پاکستان صرف 3 اوپنرز کے ساتھ گیا۔ ٹیسٹ میچز میں مسلسل شکستیں ہورہی ہیں لیکن کسی نے کچھ بھی تبدیل نہیں کرنا چاہا،امید ہے کہ نئی مینجمنٹ میرٹ پر فیصلے کرے گی۔

سلمان بٹ نے کہا کہ ماضی میں ڈومیسٹک کرکٹ کے پرفارمرز کو نظر انداز کرتے ہوئے من پسند فیصلے کئے جاتے رہے لیکن امید ہے کہ اب ایسا نہیں ہوگا کیونکہ ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی دکھانے والوں کو ترجیح دیں گے تب ہی نیا سسٹم کامیاب ہوسکتا ہے۔پاکستان نے خوش قسمتی سے اپنی 75فیصد کرکٹ یواے ای میں کھیلی،ایک ہی جیسے کرکٹرز کھیل رہے ہیں،کیا میں نے ماضی میں ہر طرح کی کنڈیشنز میں اچھی کارکردگی نہیں دکھائی۔

مزید : کھیل


loading...