نواز شریف کا ایک پل بھی جیل میں رہنا نظام عدل پر قرض ہے ، احسن اقبال

نواز شریف کا ایک پل بھی جیل میں رہنا نظام عدل پر قرض ہے ، احسن اقبال
نواز شریف کا ایک پل بھی جیل میں رہنا نظام عدل پر قرض ہے ، احسن اقبال

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہاہے کہ نواز شریف کا ایک پل بھی بے گناہ جیل میں رہنانظام عدل پر قرض ہے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ چیف جسٹس نے جب یہ کہنے پر مجبور ہوگئے ہیں کہ اس جج کا کنڈکٹ اتنا خراب ہے تو پھر انصاف کا تقاضہ یہ تھا کہ جج کے جانے کے ساتھ ہی نواز شریف کے مقدمہ کا بھی ری ٹرائل کیا جاتا۔ انہوں نے کہا کہ اگر جج کے تبادلے کے ساتھ فیصلے کو بھی دوبارہ ٹرائل پر بھیج دیا جاتا تو لوگوں کے عدلیہ پر اعتماد میں مزید اضافہ ہوتا ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے ساتھ زیادتی ہوئی ہے ، ہمیں اس کی توقع نہیں تھی۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ مریم نواز کے پاس جب ویڈیو پہنچی تو ان کی جانب سے کہا گیا کہ میں اس وقت تک اس ویڈیو پر یقین نہیں کروں گی جب تک میں اس بارے میں تحقیق نہ کرلوں کہ یہ مصدقہ ہے ۔ اس کے بعد مریم نوازنے مکمل تحقیق کی اور جب یہ ثابت ہوگیا کہ یہ ویڈیو صحیح ہے تو پھر نے مریم نواز نے کہا اس معاملے کو پارٹی قیادت کے سا منے رکھا جائے ۔ ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کا ایک پل بے گناہ جیل میں رہنانظام عدل پر قرض ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ ہمارے وکلاءویڈیو کیس کا جا ئزہ لے رہے ہیں، میں نہیں مانتا کہ حکومت نے اس ویڈیو کی فرانزک نہ کروائی ہو اور اگر حکومت اس کااعتراف نہیں کررہی کہ یہ ویڈیو اصلی ہے تو پھر حکومت اس ویڈیو کا فرانزک کرواچکی ہے ۔

مزید : قومی


loading...