یونیورسٹی آف ایجوکیشن کی تعلیم پر سالانہ عالمی کانفرنس کا آغاز

  یونیورسٹی آف ایجوکیشن کی تعلیم پر سالانہ عالمی کانفرنس کا آغاز

  

 لاہور(لیڈی رپورٹر) یونیورسٹی آف ایجوکیشن کے زیر اہتمام گزشتہ روز تعلیم پر سالانہ عالمی کانفرنس کا آغاز ہو گیا۔ اس سال کورونا وباء کے باعث یہ کانفرنس آن لائن منعقد کی جا رہی ہے، جو 19 اگست سے 28 اگست تک جاری رہے گی۔ کانفرنس میں مختلف ملکی و غیرملکی ماہرین تعلیم مقالے پیش کریں گے، جن میں برطانیہ سے پروفیسر مائیکل، پروفیسر جسٹن، ڈاکٹر رومن ریڈ اور ڈاکٹر اینی گولڈ بھی شامل ہیں۔کانفرنس کا افتتاح وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طلعت نصیر پاشا (ستارہِ امتیاز) نے کیا۔

 اپنے افتتاحی خطاب میں انہوں نے کہا کہ کورونا وباء کی وجہ سے دنیا بھر میں تعلیمی سرگرمیاں متاثر ہوئی ہیں لیکن ہم اس بت پر یقین رکھتے ہیں کہ علم کا سفر رکنا نہیں چاہیے، اس لئے ہم نے اس سال کانفرنس کا آن لائن اہتمام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کانفرنس کے انعقاد کا مقصد تعلیم کے شعبے میں ہونے والی جدید تحقیق، چیلنجز اور امکانات کا کھوج لگانا ہے۔ کانفرنس میں دنیا بھر سے عالمی شہرت یافتہ ماہرین تعلیم اس ضمن میں باہمی تبادلہ خیال کرکے اپنی سفارشات مرتب کریں گے تاکہ مستقبل میں ہم درس و تدریس میں ٹیکنالوجی کے استعمال، تعلیم میں کوالٹی اور پیشہ وارانہ صلاحیتوں میں پر مزید فوکس کر سکیں۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی چیئرمین پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر فضل احمد خالد نے کہا کہ کرونا وباء کی موجودگی کی وجہ سے یہ ضروری ہو چکا ہے کہ ماہرین تعلیم درس و تدریس کے طریقہ کار اور پالیسیوں کے حوالے سے نظرثانی کریں۔ انہوں نے اس بات پر مسرت کا اظہار کیا کہ یونیورسٹی آف ایجوکیشن باقاعدگی سے ہر سال تعلیم کے موضوع پر عالمی کانفرنس کا اہتمام کرتی ہے، جس پر یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طلعت نصیر پاشا (ستارہِ امتیاز) مبارک باد کے مستحق ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -