حکومت عوام کو سستی بجلی فراہم کرنے کیلئے اقدامات کرے، شیخ احسن رشید 

  حکومت عوام کو سستی بجلی فراہم کرنے کیلئے اقدامات کرے، شیخ احسن رشید 

  

 ملتان(نیوز رپورٹر)معروف صنعت کار اورچیف ایگزیکٹو آفیسر حفیظ گھی اینڈ جنرل ملز اور Wizواش شیخ احسن رشید نے کہا ہے کہ حکومت بین الاقوامی پاور کمپنیوں کو دعوت دے کہ وہ پاکستان میں آئیں اور توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کریں تاکہ یہاں پر جن لوگوں نے توانائی سیکٹر پر اجارہ داری قائم کی ہوئی ہے اس کا خاتمہ ہواور ان کمپنیوں میں مقابلے کی فضا پیدا ہونے سے عوام کو سستی بجلی فراہم ہوسکے گی۔ شیخ احسن رشید نے کہا (بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

کہ اس وقت حکومت پاکستان کا آئی پی پیز پر سرکلر ڈیٹ تقریباً 15‘16سو ارب روپے بنتا ہے حکومت ان کمپنیوں سے مذاکرات کررہی ہے۔پچھلے دور حکومت میں آئی پی پیز کو تقریباً پانچ سو ارب روپے سے زائد کی ادائیگی کی گئی تھی اور اب پھر ان کو 6سے 7سو ارب روپے کی ادائیگی کی بات ہورہی ہے۔ حکومت کو چاہئے کہ وہ اس سرکلر ڈیٹ کا آڈٹ کروائے تاکہ پتہ چلے کہ یہ کمپنیاں کہیں اپنی طرف سے ہی تو سرکلر ڈیٹ بنائے ہوئے تو نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت آئی پی پیز کے ساتھ بجلی کے ریٹ فکس کرے‘ دنیا بھر کی کمپنیوں کو دعوت دے کہ وہ پاکستان میں توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کریں خود ہی بجلی پیداکریں اور آگے سپلائی کریں۔ اس سے مقابلے کی فضا پیدا ہوگی اور عوام کو سستی بجلی فراہم ہوگی۔ شیخ احسن رشید نے کہا کہ حکومت نے توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کیلئے منافع تقریباً12.5فیصد رکھا ہوا ہے اس کو بڑھانا چاہئے کیونکہ 15سے 20فیصد منافع ہر شعبے میں رکھا جاتا ہے۔ اگر منافع 12.5فیصد رہا تو کوئی کمپنی یہاں آنے کو تیار نہیں ہوگی اور اس سے فائدہ موجودہ آئی پی پیز اٹھائیں گے کیونکہ کوئی اور کمپنی آئے گی نہیں ان کی اجارہ داری قائم ہوجائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کے فاطمہ گروپ نے بجلی کا پلانٹ لگایا اور اس پر تقریباً15سو ملین(22ارب روپے) کی سرمایہ کاری کی لیکن اس گروپ سے بجلی خریدنے سے انکار کردیا گیا ہے جوکہ افسوسناک بات ہے کہ ایک گروپ کی اتنی بڑی سرمایہ کاری کو ضائع کیاجارہا ہے۔ حکومت فوری طورپر ایسے اقدامات کرے جس سے موجودہ آئی پی پیز کی اجارہ داری ختم ہواور عوام کو سستی بجلی کی فراہمی ممکن ہوسکے۔

احسن رشید

مزید :

ملتان صفحہ آخر -