پی ایم اے بورے والا کا ہنگامی  اجلاس، آرتھو پیڈک سرجن علی عمران  کا لائسنس معطل کرنیکا فیصلہ مسترد

        پی ایم اے بورے والا کا ہنگامی  اجلاس، آرتھو پیڈک سرجن علی عمران  کا ...

  

ماچھیوال(نامہ نگار)پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن بوریوالہ کا ہنگامی(بقیہ نمبر22صفحہ6پر)

 اجلاس پی ایم ڈی سی کی جانب سے تحصیل ہسپتال کے آرتھو پیڈک سرجن علی عمران کا لائسنس چھ ماہ کے لیے معطل کرنے کے فیصلہ کو مسترد کر دیا.  تفصیل کے مطابق پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن بوریوالہ کا ہنگامی اجلاس صدر ڈاکٹر خالد محمود چوہدری کی زیر صدارت منعقد ہوا اجلاس میں پی ایم اے ڈسٹرکٹ وہاڑی کے صدر ڈاکٹر سجاد ڈھلوں،تحصیل جنرل سیکرٹری پی ایم اے ڈاکٹر مقصود احمد شیخ سمیت دیگر عہدداران و ممبران نے بھی شرکت کی اجلاس کے آخر میں مشترکہ اعلامیہ جاری کیا گیا کہ تحصیل اسپتال بوریوالا کے آرتھو پیڈک سرجن ڈاکٹر علی عمران پر درخواست گزار کی جانب سے لگائے گئے الزامات کو مکمل طور پر رد کرتے ہیں مزید کہنا تھا کہ پی ایم ڈی سی نے خود اپنے فیصلے میں ڈاکٹر علی عمران پر پیشہ ورانہ غفلت اور انفیکشن کے جو الزامات درخواست دہندہ کی طرف سے عائد کیے گئے تھے ان کو رد کر دیا تھا پی ایم ڈی سی نے بعض تکنیکی وجوہات  کو بنیاد بنا کر آرتھو پیڈک سرجن ڈاکٹر علی عمران کا لائسنس چھ ماہ کے لیے معطل کر دیا  پی ایم ڈی سی کے اس فیصلہ کو پی ایم اے بوریوالا اور پی ایم اے وہاڑی مشترکہ طور پر مسترد کرتے ہیں اور ڈاکٹر علی عمران کے خلاف آنے والے فیصلہ کو بدنیتی پر قرار دیتے ہوئے پی ایم اے کا کہنا تھا کہ فیصلہ کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جارہی ہے۔

اعلان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -