" مجھے توقع ہے کہ متحدہ عرب امارات کے بعد اب سعودی عرب بھی۔۔۔" اسرائیل کیساتھ معاہدے کے بعد ایک مرتبہ پھر صدر ٹرمپ بول پڑے

" مجھے توقع ہے کہ متحدہ عرب امارات کے بعد اب سعودی عرب بھی۔۔۔" اسرائیل کیساتھ ...

  

واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے توقع ظاہر کی ہے کہ سعودی عرب بھی اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ہونے والے معاہدے میں شامل ہو جائے گا۔

وائٹ ہاو¿س میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ہونے والے امن معاہدے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ متحدہ عرب امارات کو ایف 35 لڑاکا طیاروں کی فروخت زیر غور ہے۔

سعودی عرب کے اسرائیل کے ساتھ تعلقات کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں امریکی صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ میرا خیال ہے کہ سعودی عرب اسرائیل امارات معاہدے میں شامل ہو جائے گا۔ایران کے حوالے سے بات کرتے ہوئے امریکی صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے جلد ہی کہیں گے کہ امریکا ایران کے خلاف معطل کی گئی سابقہ تمام پابندیوں کی بحالی چاہتا ہے۔

دوسری جانب سفارتی ذرائع کا بتانا ہے کہ روس اور چین سمیت دیگر ممالک کی جانب سے امریکی اقدام کی شدید مخالفت متوقع ہے۔

یاد رہے کہ ایران کی امریکا سمیت عالمی طاقتوں کے ساتھ ہونے والی ایٹمی ڈیل کے بعد تہران کے خلاف پابندیاں معطل کی گئی تھیں۔

مزید :

بین الاقوامی -