غیر قانونی طور پر 4ہزار کنال اراضی فروخت کا الزام، نجی ہاﺅسنگ سکیم کا مالک نیب لاہور میں گرفتار

غیر قانونی طور پر 4ہزار کنال اراضی فروخت کا الزام، نجی ہاﺅسنگ سکیم کا مالک ...
غیر قانونی طور پر 4ہزار کنال اراضی فروخت کا الزام، نجی ہاﺅسنگ سکیم کا مالک نیب لاہور میں گرفتار

  

لاہور(خبرنگار) ڈائریکٹر جنرل قومی احتساب بیورو  لاہور کی جانب سے مبینہ غیر قانونی ہاﺅسنگ سکیم کے متاثرین کی شکایات و احتجاج پر نوٹس لیتے ہوئے گرینڈ ایونیو ہاﺅسنگ سکیم کے مالک ملزم ریاض احمد چوہان کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔ملزم ریاض احمدچوہان پر مبینہ طور پر عوام کو4ہزار کنال اراضی غیر قانونی طور پر فروخت کرتے ہوئے اربوں روپے وصول کرنے کا الزام ہے۔ نجی ہاﺅسنگ سکیم کے سینکڑوں متاثرین انتظامیہ کے خلاف دادرسی کیلئے نیب لاہور آفس میں پیش ہوئے تھے۔

تفصیلات کے مطابق گرینڈ ایونیو ہاﺅسنگ سکیم کی انتظامیہ کیجانب سے 2012ء میں فیروز پور روڈ لاہور پر ہاﺅسنگ سوسائٹی قائم کی گئی جبکہ ملزمان نے ویسٹا ڈویلپرز نامی کمپنی کے ذریعے گرینڈ ایونیو ہاﺅسنگ سکیم کے نام پر لگ بھگ4000فائلیں عوام کو فروخت کرتے ہوئے کم و بیش ڈھائی ارب(Rs 2.5 billion) روپے وصول کئے اگرچہ ملزمان کی جانب سے ٹی ایم اے لاہور سے محض 62کنال زمین کی منظوری حاصل کی گئی تھی تاہم ملزمان کی باہمی ملی بھگت سے مجموعی طور پر 4ہزار کنال اراضی عوام کو مبینہ غیر قانونی طور پر فروخت کر دی گئی۔ مذکورہ ہاﺅسنگ سکیم کے خلاف تاحال200متاثرین دادرسی کیلئے شکایات درج کروا چکے ہیں جن پر عملدرآمد کرتے ہوئے نیب لاہور نے مرکزی ملزم ریاض احمد چوہان کی گرفتاری عمل میں لائی۔

نیب لاہور حکام کیجانب سے ملزم ریاض احمد چوہان کو جسمانی ریمانڈ کے حصول کیلئے کل احتساب عدالت لاہورکے روبرو پیش کیا جائیگا۔چیئر مین نیب جسٹس جاوید اقبال کیجانب سے غیر قانونی ہاﺅسنگ سوسائٹیوں اور انتظامیہ کیخلاف تادیبی اقدامات اٹھائے جانے کی واضح ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

ڈی جی نیب لاہور کا کہنا ہے کہ عوام سے لوٹی گئی دولت کی واپسی کیلئے زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر سختی سے گامزن ہیں جبکہ بدعنوان عناصر کیخلاف میرٹ کی بنیاد پر ہی کارروائیاں جاری رکھنے کیلئے پر عزم ہیں۔ گرینڈ ایونیو ہاﺅسنگ سکیم کے مالک ملزم ریاض احمد چوہان کی گرفتاری پرمتاثرین کیجانب سے چیئر مین نیب و ڈی جی نیب لاہور کیلئے تشکر کا اظہار کیا گیا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -