اظہر علی اور اسد شفیق کی حالیہ کارکردگی پر تنقید، جاوید میانداد نے حیران کن موقف دیدیا

اظہر علی اور اسد شفیق کی حالیہ کارکردگی پر تنقید، جاوید میانداد نے حیران کن ...
اظہر علی اور اسد شفیق کی حالیہ کارکردگی پر تنقید، جاوید میانداد نے حیران کن موقف دیدیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق کپتان جاوید میانداد نے کہا ہے کہ اظہر علی اور اسد شفیق کو ناقص کارکردگی پر شدید تنقید کا سامنا ہے مگر اس کی بنیاد پر انہیں ڈراپ کرنے کی باتیں قبل از وقت ہیں، کوچنگ سٹاف کو چاہیے کہ وہ دونوں کا اعتماد بحال کرنے کی کوشش کرے، اسی سے اچھے نتائج آنا شروع ہوجائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق انگلینڈ کیخلاف پہلے ٹیسٹ میچ میں فتح کے قریب پہنچ کر شکست سے دوچار ہونے پر اظہر کی قائدانہ صلاحیتوں پر بھی کافی اعتراضات اٹھائے گئے جس سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے جاوید میانداد نے کہا کہ اظہر علی کو کپتان بنانے کی وجہ یہ ہے کہ دوسرا کوئی موذوں امیدوار نہیں تھا، پاکستان میں یہی مسئلہ ہے کہ یہاں پر کپتان تیار نہیں کئے جاتے بلکہ اچانک کھلاڑیوں کو ذمہ داری سونپ دی جاتی جس کے نتیجے میں وہ اپنی معلومات اور تجربہ استعمال کرنے کے بجائے کپتانی سیکھتے ہوئے دکھائی دیتے ہیں۔ 

ان کا کہنا تھا کہ انگلینڈ میں اس کے برعکس باقاعدہ قائد تیار کئے جاتے ہے، پہلے ہمارے ڈومیسٹک سسٹم میں اچھے کپتان تیار ہوتے تھے مگر نئی تبدیلیوں سے صورتحال اور بھی مشکل ہوگئی ہے۔ جاوید میانداد نے پاکستانی ٹیم کے کم بیک کی امید ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ یہ نہیں سمجھنا چاہیے ہم سیریز سے باہر ہوچکے، پہلے ٹیسٹ میں غلطیوں کی وجہ سے مضبوط پوزیشن کے باوجود شکست کا سامنا کرنا پڑا، اگر بیٹسمین غلطیوں سے سبق سیکھتے ہوئے اچھا مجموعہ تشکیل دیں باﺅلنگ اٹیک کارکردگی کا معیار برقرار رکھے تو سیریز 1-1 سے برابر ہوسکتی ہے۔

 واضح رہے کہ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان سیریز میں انگلینڈ نے پہلے ٹیسٹ میچ میں پاکستان کو تین وکٹوں سے شکست دے کر سیریز میں 0-1 کی برتری حاصل کی جبکہ دوسرا ٹیسٹ میچ بارش کی نذر ہو گیا اور اس طرح برطانوی ٹیم کی برتری بھی برقرار ہے جبکہ تیسرا میچ ٹیسٹ سیریز برابر کرنے کا آخری موقع ہے جو کل سے ساﺅتھمپٹن میں کھیلا جائے گا۔ 

مزید :

کھیل -