پاکستان فارماسیوٹیکل مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن کا ہنگامی اجلاس

پاکستان فارماسیوٹیکل مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن کا ہنگامی اجلاس

 لاہور(کامرس رپورٹر )پاکستان فارماسیوٹیکل مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن (پی پی ایم اے) کے ہنگامی اجلاس میں ایک مرتبہ پھر محکمہ صحت پنجاب کے غیر قانونی اقدامات کے خلاف قرارداد پاس کی گئی جس میں یہ طے پایا کہ محکمہ صحت پنجاب کی جانب سے ڈرگ ایکٹ کی صریحا خلاف ورزی کی گئی جس طرح سے میڈی سینا فارما اور میڈی سرچ فارما کے خلاف کارروائی کی گئی ۔ ایک ہی دن میں سیمپل کا اٹھایا جانا ، رپورٹ کا آنا، پی کیو سی بی کے اجلاس کا منعقد ہونا اور فیصلہ صادر کرنا ۔ عجلت میں بلائے گئے اجلاس میں تمام غیر قانونی اقدامات اٹھائے گئے اور فیصلہ نہ ہونے کے باوجود ایف آئی آر کا ٹی گئی اوران دونوں کمپنیوں کے مالکان کو گرفتار کر لیناجس کی آج سے پہلے پاکستان فارما انڈسٹری یا دنیا کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی۔ اجلاس میں محمد منصور دلاور، خواجہ شاہ زیب اکرم ، اعجاز احمد صدیقی ،اکبر علی بھٹی ،عزیر ناگرہ، خالد منیر، ڈاکٹر ذوالفقار ملک، شفیق عباسی، ڈاکٹر طاہر اعظم ، شہنشاہ ریاست، مبشر جاوید ، عابد علی جاوا، چوہدری یوسف علی، حسیب خان ، عامر سلیم بٹ، عدیل حیدر اور دیگر ممبران نے شرکت کی ۔اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا کہ ان اقدامات سے ایک مرتبہ پھر یہ ثابت ہوتا ہے کہ بعض عناصر باقاعدہ ایک مذموم منصوبہ بندی کے تحت پنجاب کی انڈسٹری کوناقابل تلافی نقصان پہنچانے اور انڈسٹری کو تباہ اور بند کرنے کی مذموم کوشش کر رہے ہیں۔ اجلاس میں یہ بھی طے پایا کہ اگر ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی اسی طرح ہوتی رہی تو پنجاب گورنمنٹ کے تمام اداروں کو ادویات کی سپلائی بند کر دی جائے گی اور احتجاجا انڈسٹری کو بھی بند کر دیا جائے گا۔ پاکستانی فارما انڈسٹری نے ادویات کی بہتر کوالٹی کے باعث پوری دنیا میں اپنا نام بنایا ہے ۔انڈسٹری نے نہ صرف لاکھوں افراد کو روزگار مہیا کیا بلکہ ملکی و بین الاقوامی ادویات کی ضروریات کو بھی پورا کیا ہے۔اجلاس کے شرکاء نے وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف سے استدعا کی کہ ڈرگ رولز کی دھجیاں اڑانے والوں اور پنجاب کی فارما انڈسٹری کو ناقابل تلافی نقصان پہنچانے والوں کے خلاف فوری کارروائی کریں۔

مزید : کامرس