بد ترین لوڈ شیڈنگ جاری ،پیداوار کم ہو کر ساڑھے سات ہزار میگا واٹ رہ گئی

بد ترین لوڈ شیڈنگ جاری ،پیداوار کم ہو کر ساڑھے سات ہزار میگا واٹ رہ گئی

لاہور(کامرس رپورٹر)ملک میں گزشتہ روز بھی بد ترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا ۔ بجلی کی پیداوار کم ہو کر ساڑھے سات ہزار میگا واٹ کی سطح پر آگئی جس سے شارٹ فال بڑھ گیا ۔ گزشتہ روز شہروں میں 12 گھنٹے اور دیہی علاقوں و چھوٹے شہروں میں 16 گھٹنے تک کی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔ مرمت کے نام پر تمام سب ڈویژنوں میں دو سے تین فیڈر دس دس گھنٹہ کے لئے بند رکھے گئے ۔ دیہی علاقوں میں رات کے وقت لوڈ بڑھنے پر ایک گھنٹہ کے بعد چار چار گھنٹہ کی بھی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔ آج سے ارسا کی جانب سے نہروں کی بندش کا سلسلہ شروع ہو جائے گا جس سے ڈیموں سے پانی کے اخراج میں کمی ہو گی۔ پانی میں کمی سے ہائیڈل کی پیداوار کم ہو جائے گئی اور ملک میں لوڈ شیڈنگ کے دورانیہ میں مزید اضافہ ہو جائے گا ۔ انرجی مینجمنٹ سیل کے ذرائع کے مطابق گزشتہ روز بجلی کی مجموعی ڈیمانڈ 13370 میگا واٹ جبکہ پیداوار 7530 میگا واٹ رہی طلب و رسد میں 5840 میگا وا ٹ کا فرق رہا ۔

مزید : صفحہ آخر