پاکستان کیساتھ تجارت کو فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں : سری لنکن قونصل جنرل

پاکستان کیساتھ تجارت کو فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں : سری لنکن قونصل ...

اسلام آباد ( آن لائن ) کراچی میں تعینات سری لنکا کے کونسل جنرل جی ایل نیناتھیوا نے سری لنکا ہائی کمیشن کے کونسلر کے ہمراہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ کیا اور تاجر برادری سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ملک پاکستان کے ساتھ باہمی تجارتی و اقتصادی تعلقات کو مزید فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتا ہے کیونکہ دونوں ممالک کے درمیان متعدد شعبوں میں دو طرفہ تجارت کو بہتر کرنے کے عمدہ مواقع پائے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ادویات، چاول، سبزیاں و پھل، سیمنٹ، سٹیل، گارمنٹس اور ٹیکسٹائل سمیت اپنی متعدد مصنوعات سری لنکا کو برآمد کر سکتا ہے جبکہ سری لنکا چائے کی پتی، باتھ رومز کی فیٹنگ اور ٹائلوں سمیت دیگر مصنوعات پاکستان کو برآمد کر سکتا ہے۔ لہذا انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ دونوں ممالک کی تاجر برادری تمام ممکنہ کاروباری مواقعوں سے استفادہ حاصل کرنے کیلئے کوششیں تیز کرے۔ انہوں نے کہا کہ سری لنکا نے چین اور سارک ممالک کے ساتھ آزاد تجارت کے معاہدے کئے ہوئے ہیں اور پاکستان سری لنکا کے ساتھ قریبی تعاون فروغ دے کر چین، آسیان، سارک ممالک کی مارکیٹوں تک بہتر رسائی حاصل کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سری لنکا اپنی 75فیصد بجلی پانی سے پیدا کرتا ہے اور اس شعبے میں بھی تعاون بڑھا کر پاکستان و سری لنکا فائدہ مند نتائج حاصل کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سری لنکا کے صنعتکاروں نے پاکستان کے ساتھ برآمدت کے فروغ کیلئے اپنی پیداواری صلاحیت کو بہتر کرنے کی خاطر کافی سرمایہ کاری کی لیکن پاکستان کی طرفسے ایس آر او ز کے ذریعے ٹیکسوں میں اضافہ کرنے کی روش کی وجہ سے سری لنکن ایکسپورٹرز کو پاکستان کے ساتھ برآمدات کو فروغ دینے میں مشکلات پیش آ رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سری لنکا فارماسوٹیکلز شعبے میں سرمایہ کاری کرنے کیلئے بیرونی سرمایہ کاروں کو پرکشش مراعات فراہم کر رہا ہے

لہذا انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ پاکستان کے سرمایہ کارسری لنکا میں فارماسوٹیکلز انڈسٹری قائم کر کے اپنی برآمدات کو بہتر فروغ دے سکتے ہیں۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر شیخ عامر وحید نے کہا کہ آزاد تجارت کا معاہدہ کرنے کے باوجود پاکستان اور سری لنکا کی باہمی تجارت اتنی حوصلہ افزاء نہیں ہے لہذا دونوں ممالک اپنے نجی شعبوں کے درمیان مضبوط روابط قائم کرنے کی کوشش کریں تا کہ دونوں ممالک کی تاجر برادری باہمی تعاون کے تمام ممکنہ مواقعوں سے استفادہ حاصل کر سکے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور سری لنکا تجارتی وفود کا باکثرت تبادلہ کر کے اور ایک دوسرے کے ملک میں سنگل کنٹری نمائشیں منعقد کر کے دو طرفہ تجارت میں خاطر خواہ اضافہ کر سکتے ہیں۔ انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری سری لنکن ہائی کمیشن کے ساتھ قریبی تعاون فروغ دے کر دونوں ممالک کے درمیان باہمی تجارتی و اقتصادی تعلقات کو مزید بہتر کرنے کی کوشش کرے گا۔ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر محمد نوید اور نائب صدر نثار مرزا نے اپنے خطاب میں کہا کہ سی پیک منصوبے نے پاکستان میں توانائی اور انفراسٹریکچر کی ترقی سمیت دیگر شعبوں میں کاروبار کے بے شمار نئے مواقع پیدا کر دیئے ہیں لہذا سری لنکا کے سرمایہ کار پاکستان کا دورہ کر کے جوائنٹ وینچرز اور سرمایہ کاری کے مواقع تلاش کریں۔

مزید : کامرس