نواز شریف کی ایک اور درخواست دائر

نواز شریف کی ایک اور درخواست دائر

اسلام آباد( آن لائن)سابق وزیر اعظم نواز شریف نے ریفرنس یکجا کرنے اور پانامہ فیصلہ غیرقانونی قرار دینے سے متعلق ان چیمبر فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں ایک اور درخواست دائر کر دی ۔ جس میں رجسٹرار آفس کے اعتراضات کے خلاف اپیل پر ان چیمبر فیصلے کو کالعدم قرار دینے کی استدعا کرتے ہوئے درخواست پر سماعت کیلئے بنچ تشکیل دینے کی استدعا کر دی۔منگل کے روز سابق وزیر اعظم نواز شریف کی جانب سے وکلاء نے ریفرنس یکجا کرنے اور پانامہ فیصلہ غیرقانونی قرار دینے سے متعلق ان چیمبر فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں ایک اور درخواست دائر کر دی ہے۔ جس میں استدعا کی گئی کہ سولہ نومبر کے ان چیمبر حکم کیخلاف بنچ تشکیل دیاجائے اور سپریم کورٹ کا بنچ چیمبر حکم کا دوبارہ جائزہ لے، درخواست کے متن میں کہا گیاکہ کئی مقدمات میں فیصلوں کے بعد آئینی درخواستیں دائر ہوئیں، ناہید بٹ کے کیس کی عدالتی مثال بھی موجود ہے، فیصلہ خلاف قانون قرار دینے کیلئے آئینی درخواست ہی دائر ہو سکتی ہے، جس کے لئے تکنیکی نکات انصاف کی راہ میں رکاوٹ نہیں بن سکتے، واضح رہے کہ احتساب عدالت میں سابق وزیر اعظم نواز شریف نے اپنے خلاف چلنے والے تینوں ریفرنسز کو یکجا کرنے کے حوالے سے درخواست دی تھی جو خارج کر دی گئی تھی۔ جس کے بعدانہوں نے سپریم کورٹ میں احتساب عدالت کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر کی تھی جس پر رجسٹرار آفس نے نوازشریف کی درخواست پر اعتراضات عائد کیے تھے اورچیف جسٹس نے چیمبر اپیل میں اعتراضات برقرار رکھے تھے۔

درخواست دائر

مزید : صفحہ اول