تحریک انصاف کی درخواست پر الیکشن کمیشن کا مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کو نوٹس

تحریک انصاف کی درخواست پر الیکشن کمیشن کا مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کو نوٹس

اسلام آباد (آئی این پی ،مانیٹرنگ ڈیسک) الیکشن کمیشن نے (ن) لیگ اور پیپلز پارٹی کے خلاف پاکستان تحریک انصاف کی فارن فنڈنگ کے حوالے سے درخواست سماعت کے لئے منظور کرتے ہوئے پارٹی سربراہان کو 8جنوری تک جواب جمع کرانے کی ہدایت جاری کردی‘ چیف الیکشن کمشنر نے پی ٹی آئی کے وکیل سے استفسار کیا کہ اب اپ ہمارا اختیار مانتے ہیں پہلے تو آپ ہمارا اختیار مانتے ہی نہیں تھے۔ منگل کو الیکشن کمیشن نے (ن) لیگ اور پیپلز پارٹی کے خلاف فارن فنڈنگ سے متعلق درخواست سماعت کے لئے منظور کرلی۔ الیکشن کمیشن نے نواز شریف کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیا۔ جواب طلبی سے متعلق بلاول بھٹو اور آصف زرداری کو بھی نوٹس جاری کردیئے گئے۔ پارٹی سربراہان 8جنوری تک جواب جمع کرائیں۔ درخواست گزار فرخ حبیب اور وکیل فیصل چوہدری الیکسن کمیشن میں پیش ہوئے چیف الیکشن کمشنر نے استفسار کرتے ہوئے کہا کہ اب آپ ہمارا اختیار مانتے ہیں پہلے تو آپ ہمارا اختیار مانتے ہی نہیں تھے۔ وکیل پی ٹی آئی نے کہا کہ ہم الیکشن کمیشن کے اختیار کو مانتے ہیں دونوں جماعتوں کے برطانیہ اور امریکہ سے فنڈنگ کے شواہد بھی موجود ہیں۔ مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی 2013 اور 2015 کے جمع کرائے گئے اثاثوں کی تفصیل نا مکمل ہے فارن فنڈنگ سے متعلق تفصیلات ہم پیش کریں گے فارن فنڈنگ سے متعلق جو قانون ہے اس کے تحت ان کے خلاف کارروائی کی جائے۔دریں اثناچیف الیکشن کمشنر سردار رضا کی سربراہی میں 5 رکنی کمیشن نے مسلم لیگ (ن) اورپیپلز پارٹی کے خلاف مبینہ غیرملکی فنڈنگ سے متعلق پی ٹی آئی رہنما فرخ حبیب کی درخواست پر سماعت کی۔دوران سماعت درخواست گزار نے مؤقف اپنایا کہ دونوں جماعتوں کے 2013 اور 2015 کے اثاثوں کی تفصیلات نا مکمل ہیں۔چیف الیکشن کمشنر نے سماعت کے بعد نواز شریف، آصف زرداری اور بلاول بھٹو کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 8 جنوری کو جواب طلب کرلیا جب کہ کیس کی مزید سماعت بھی 8 جنوری کو ہوگی۔

مزید : صفحہ آخر