شمالی کوریا نے مئی میں امریکہ پر ’’معاوضہ طلب کرنے والا‘‘ سائبر حملہ کیا تھا : تھامسن بوسرٹ

شمالی کوریا نے مئی میں امریکہ پر ’’معاوضہ طلب کرنے والا‘‘ سائبر حملہ کیا ...

واشنگٹن(اظہر زمان، بیورو چیف) امریکہ نے شمالی کوریا پر الزام لگایا ہے کہ اس نے مئی میں ’’معاوضہ طلب کرنے والا‘‘ سائیبر حملہ کیا تھا جس سے تقریباً ڈیڑھ سو ممالک کے کمپیوٹر متاثر ہوئے تھے۔ صدر ٹرمپ کے انسداد دہشتگردی کے مشیر تھامس بوسرٹ نے منگل کے روز وائٹ ہاؤس سے جاری ہونے والے اپنے بیان میں کہا ہے کہ امریکہ کے پاس امر کے خاصے شواہد ہیں کہ شمالی کوریا کے سائبر کے شعبے میں معاون ادارے اس عمل کے ذمہ دار ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ ایک ایسا لا پرواہ قسم کا حملہ تھا جس کے اثرات اقتصادی شعبے سے کہیں زیادہ پھیلے ہوئے تھے۔ اس حملے کے ذریعے ایک مخصوص وائرس کمپیوٹر پر قبضہ کر کے اس بند کر دیتا ہے اور پھر اسے کھولنے کے لئے ایک مخصوص رقم کا مطالبہ کیا جاتا ہے۔ وائٹ ہاؤس کے مشیر نے مزید بتایا کہ شمالی کوریا کے یہ ہیکرز گزشتہ ہفتے تک سرگرم عمل نظر آ رہے تھے جنہیں امریکہ اور دوسرے ممالک نے جوابی کارروائی کے بعد اپنا کام بند کرنے پر مجبور کر دیا۔ مسٹر بوسرٹ نے بتایا کہ 12مئی کو ہونے والے سائبر حملے نے 150ممالک کو متاثر کیا تھا اور برطانیہ میں بیس فیصد ہسپتالوں کو مفلوج کر کے رکھ دیا تھا۔

سائبر حملہ

مزید : علاقائی