اسلام آباد ہائیکورٹ، اسحٰق ڈار کے ضامن کی احتساب عدالت کے فیصلے کیخلاف حکم امتناعی کی استدعا منظور

اسلام آباد ہائیکورٹ، اسحٰق ڈار کے ضامن کی احتساب عدالت کے فیصلے کیخلاف حکم ...

اسلام آباد(آن لائن)اسلام آباد ہائی کورٹ نے خزانہ اسحق ڈار کے ضامن کی استدعا منظور کرتے ہوئے احتساب عدالت کے14دسمبر کے فیصلے کے خلاف حکم امتناعی جاری کرنے کا حکم دیتے ہوئے مزید سماعت 20دسمبر تک کیلئے ملتوی کردی۔ گزشتہ روز اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس اطہرمن اللہ اور جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب پر مشتمل ڈویژنل بینچ نے سابق وزیرخزانہ اسحق ڈار کے ضامن احمد علی قدوسی کی جانب سے دائر درخواست پر سماعت کی۔فاضل بینچ نے جب سماعت شروع کی تو درخواست گزار کی جانب سے راجہ بلال آصف ایڈووکیٹ عداالت میں پیش ہوئے اور دلائل دیتے ہوئے عدالت عالیہ سے استدعا کی کہ درخواستگزار کی جانب سے21نومبر2017ء کو اسلام آباد کی احتساب عدالت نمبر1 میں ملزم اسحق ڈار کے ضامن کے طور پر 50لاکھ روپے جمع کروائے اور احتساب عدالت سے سابق وزیر خزانہ اسحق ڈار جو کہ لندن میں زیر علاج ہے ان کو پیش کرنے کیلئے مزید وقت دینے کی استدعا کی لیکن اسلام آباد کی احتساب عدالت نے درخواست مسترد کردی جو کہ بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے، دلائل دیتے ہوئے وکیل صفائی نے مزیدکہاکہ اسلام آباد کی احتساب عدالت نمبر1کے 14دسمبر کے فیصلے کو کالعدم قرار دے کر کارروائی سے روکا جائے۔بعد ازاں عدالت نے دلائل سننے کے بعد20دسمبر تک احتساب عدالت کی ضامن کیخلاف کارروائی روکنے کا حکم دیتے ہوئے قومی احتساب بیورو سے جواب طلب کرلیا ہے اور مزید سماعت20دسمبر تک کیلئے ملتوی کردی۔

مزید : صفحہ آخر