نیشنل لائبریری میں’ گوشہ ترکی‘ قائم ، ترک سفیر نے افتتاح کیا

نیشنل لائبریری میں’ گوشہ ترکی‘ قائم ، ترک سفیر نے افتتاح کیا

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)پاکستان اور ترکی کے عوام میں باہمی قربت میں اضافہ کے لئے نیشنل لائبریری میں’ گوشہ ترکی‘ قائم کردیاگیا۔ منگل کو پاکستان میں ترکی کے سفیر صادق بابر گرگن نے وفاقی سیکریٹری قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن انجینئر عامر حسن کے ہمراہ ’ترک کارنر‘ کا افتتاح کیا۔ نیشنل لائبریری میں یہ چوتھا گوشہ ہے جو آباد کیاگیا ہے۔ اس سے قبل بیلاروس، امریکہ اور آذربائیجان نے بھی اپنے گوشے آباد کئے ہیں۔بیلاروس کے وزیراعظم نے دورہ پاکستان کے دوران نیشنل لائبریری میں ’بیلاروس کارنر‘ کا افتتاح کیاتھا۔ ترک کارنر کی تزئین وآرائش بھی ترک حکومت نے کی ہے جبکہ ترکی کی جانب سے ایک ہزار کتب بھی تحفے میں دی گئی ہیں۔ ترکی کے سفیر صادق بابر گرگن نے نیشنل لائبریری میں ’ترک کارنر‘ کے قیام پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان اور ترکی دوبھائی ہیں۔ دونوں کے عوام میں ایک دوسرے کے لئے بے حد محبت کا جذبہ موجود ہے۔ انہوں نے کہاکہ گوشہ ترکی قائم ہونے سے پاکستانی عوام بالخصوص طالب علموں کو ترکی کی تاریخ، ادب، فن وثقافت اور دیگر موضوعات پر معیاری معلومات کی فراہمی میں مدد ملے گی۔ صادق بابر گرگن نے کہاکہ گوشہ کا قیام دونوں ممالک کے عوام کو مزید قریب لانے میں اہم ثابت ہوگا۔انہوں نے مشیر وزیراعظم عرفان صدیقی اور وفاقی سیکریٹری انجینئر عامر حسن کی علم وادب کے فروغ کے لئے کوششوں کو سراہا۔ قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن کے وفاقی سیکریٹری انجینئر عامر حسن نے گوشہ ترکی کے قیام پر ترک حکومت کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان اور ترکی کے درمیان تعلقات کی ایک طویل اور گہری تاریخ ہے۔ برصغیر کے مسلمان قیام پاکستان سے قبل سے ترکی کے ساتھ گہرا رشتہ رکھتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ امریکی مصنف سٹوآرٹ مرے کے نزدیک نیشنل لائبریری پاکستان کے قدیم ترین ثقافتی اداروں میں سے ہے جو ماضی او رحال کے حوالے سے قیمتی معلومات کی آگہی کا اہم ذریعہ رہا ہے۔ انجینئر عامر حسن نے کہاکہ نیشنل لائبریری میں تین لاکھ کیٹلاگ ، دس ہزار نایاب کتب اور پانچ سو اسی ہاتھ سے لکھے قدیمی نسخے موجود ہیں۔پچاس سال سے زائد عرصہ میں شائع ہونے والے 5500جلدوں میں اخبارات اورمجلے، سی ڈیز اور جدید برقی شکل میں معلومات کا خزانہ اس کے علاوہ ہے۔ استنبول میں قائم اوآئی سی کے مرکز تحقیق برائے اسلامی تاریخ، فنون لطیفہ اور ثقافت (ارسیکا)کا عطیہ کردہ بیش قیمت تحقیقی مواد اور چائنا ریڈیو کے چین میں شائع شدہ اردو کتب بھی لائبریری کا حصہ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ قومی تاریخ وادبی ورثہ کے انتظام میں آنے کے بعد سے نیشنل لائبریری میں جدید خطوط پر متعدد اقدامات کئے گئے ہیں تاکہ مطالعہ کی عادت کو فروغ ملے۔ انجینئر عامر حسن نے توقع ظاہر کی کہ گوشہ ترکی سے طالب علم، محققین اور عوام بھرپور استفادہ کریں گے۔ انہوں نے ترک سفارت خانہ،ترقی اور تعاون کے لئے ترک ادارہ (ٹیکا)کے کنٹری ڈائریکٹر محمد عمراختونا ، صدر نیشنل لائبریری ترکی ذوالفی طومان کا شکریہ اداکیا۔ اس موقع پر قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن کے جوائنٹ سیکریٹری کیپٹن (ر) عبدالمجید نیازی، نیشنل لائبریری کے ڈائریکڑ سید غیورحسین اور دیگر حکام بھی موجود تھے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر